Aaj TV News

BR100 4,439 Increased By ▲ 19 (0.44%)
BR30 22,677 Increased By ▲ 65 (0.29%)
KSE100 42,505 Increased By ▲ 170 (0.4%)
KSE30 18,046 Increased By ▲ 102 (0.57%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 288,047 747
DEATHS 6,162 9

معاون خصوصی برائے قومی سلامتی ڈاکٹر معید یوسف نے کہاہےکہ روس نے سیاسی نقشے پر پاکستان کے موقف کی حمایت کی ہے۔

بدھ کو اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ شنگھائی تعاون تنظیم کے قومی سلامتی کے مشیروں کے گزشتہ روز کے اجلاس میں پاکستان کے سیاسی نقشے کے بارے میں بھارت کے اعتراضات مسترد کردیے گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھارت نے11ستمبر کو پاکستان کے سیاسی نقشے سے متعلق شکایت کی اور پاکستان نے تنظیم کو اپنا تحریری جواب جمع کرایا۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی نمائندے اجیت دوول نےشنگھائی تعاون تنظیم کے رکن ملکوں کے قومی سلامتی کے مشیر کے اجلاس میں پاکستان کے سیاسی نقشے پر باضابطہ طورپر اعتراض اٹھایا اور کسی کو سنے بغیر اجلاس چھوڑ کر چلے گئے۔

ڈاکٹر معید یوسف نے کہا کہ بھارت کو عالمی قانون کے تحت متنازعہ علاقے جموں و کشمیر کو اپنا حصہ ظاہر کرنے کا کوئی حق حاصل نہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان تمام عالمی فورموں پر بھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیر سے متعلق اپنی آواز بلند کرتا رہے گا۔

انہوں نے کہا کہ شنگھائی تعاون تنظیم علاقائی تعاون کا پلیٹ فارم ہے اور پاکستان اس فورم میں تعمیری کردار ادا کررہا ہے۔

ایک سوال کے جواب میں معاون خصوصی نے کہا کہ پاکستان خطے میں امن اور خوشحالی کےلئے کام کرنے کا خواہاں ہے۔

افغان مسئلے کے حوالے سے معید یوسف نے کہا کہ پوری دنیا نے افغانستان میں قیام امن کےلئے پاکستان کی کوششوں کا اعتراف کیا ہے۔

ریڈیو پاکستان