Aaj TV News

BR100 4,519 Increased By ▲ 22 (0.49%)
BR30 18,277 Decreased By ▼ -62 (-0.34%)
KSE100 44,114 Increased By ▲ 178 (0.41%)
KSE30 17,034 Increased By ▲ 95 (0.56%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,283,886 411
DEATHS 28,704 7
Sindh 475,097 Cases
Punjab 442,876 Cases
Balochistan 33,471 Cases
Islamabad 107,601 Cases
KP 179,888 Cases

پاکستان میں ٹک ٹاک ایک دفعہ پھر بحال کر دی گئی ، پابندی ٹک ٹاک کی غیر اخلاقی مواد کو کنٹرول کرنے کے یقین دہائی پر ہٹائی گئی۔

پی ٹی اے کی جانب سے ٹک ٹاک کی بحالی سے متعلق اعلامیہ جاری کیا گیا ہے جس کے مطابق ٹک ٹاک کی جانب سے غیر اخلاقی مواد ہٹانے یقین دہانی کے بعد ایپلیکشن کو بحال کیا گیا۔

ٹک ٹاک پر 20 جولائی 2021 کو پابندی عائد کی گئی تھی۔ ٹک ٹاک نے یقین دہانی کرائی کہ ٹک ٹاک پر مسلسل غیر قانونی مواد اپلوڈ کرنے والوں کو بلاک کیا جائے گا۔

پی ٹی اے پابندی کے نفاذ کے بعد سے ٹک ٹاک انتظامیہ کے ساتھ رابطے میں تھا۔ ترجمان پی ٹی اے کا کہنا ہے کہ پی ٹی اے ٹک ٹاک پر غیر قانونی مواد کی مانیٹرنگ جاری رکھے گا۔

ٹک ٹاک پابندی کا پس منظر

رواں سال مارچ میں پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) نے پشاور ہائی کورٹ کے حکم پر ٹک ٹاک ایپلی کیشن پر پابندی عائد کر دی تھی۔ اس وقت پشاور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس قیصررشید خان نے ٹک ٹاک کے خلاف درخواست پر سماعت کرتے ہوئے کہا تھا کہ ’ٹک ٹاک پر ڈالی جانے والی ویڈیوز ہمارے معاشرے کے لیے قابل قبول نہیں ہیں۔‘

چیف جسٹس قیصررشید خان نے حکم دیا تھا کہ ' ٹک ٹاک ویڈیوز سے معاشرے میں فحاشی پھیل رہی ہے، اس کو فوری طورپر بند کیا جائے۔'

تاہم اپریل میں ٹک ٹاک کی جانب سے غیر اخلاقی اور نامناسب مواد ہٹانے کی یقین دہانی پر عدالت عالیہ نے پی ٹی اے کو ایپ پر سے پابندی ہٹانے کا حکم دیا تھا۔ عالت کے حکم پر پی ٹی اے نے مذکورہ پابندی ہٹا دی تھی۔

بعد ازاں جون کے آخر میں سندھ ہائی کورٹ نے سوشل میڈیا ایپلی کیشن ٹک ٹاک پر غیر اخلاقی مواد اپلوڈ کیے جانے کے حوالے سے دائر درخواست پر فیصلہ سناتے ہوئے ایپ پر پاکستان بھر میں پابندی عائد کرنے کا حکم صادر کیا۔

مقامی وکیل بیریسٹر اسد اشفاق نے عدالت عالیہ میں درخواست جمع کروائی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ ٹک ٹاک ایپ پر غیراخلاقی اور غیر اسلامی مواد شیئر کیا جارہا ہے۔

درخواست گزار کا کہنا تھا کہ اس حوالے سے بارہا پی ٹی اے میں شکایات درج کرائی گئی مگر تاحال کوئی کارروائی عمل میں نہیں لائی گئی۔