Aaj TV News

BR100 4,858 Decreased By ▼ -103 (-2.07%)
BR30 23,865 Decreased By ▼ -558 (-2.28%)
KSE100 46,009 Decreased By ▼ -519 (-1.12%)
KSE30 18,179 Decreased By ▼ -243 (-1.32%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,227,905 1,897
DEATHS 27,327 81
Sindh 451,448 Cases
Punjab 423,670 Cases
Balochistan 32,772 Cases
Islamabad 104,348 Cases
KP 171,589 Cases

لاہور کے سیشن کورٹ کے جوڈیشل مجسٹریٹ یوسف عبدالرحمان نے عفت عمر کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست مسترد کرتے ہوئے ان کے وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے ہیں۔ عدالت نے علی گل پیر کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری بھی جاری کیے ہیں۔

گلوکار علی ظفر نے میشا شفیع کے ہراساں کرنے کے الزامات کے تناظر میں عفت عمر اور علی گل پیر کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ دائر کیا تھا۔

اس حوالے سے عفت عمر کی ایک چیٹ بھی منظرعام پر آئی ہے۔

عدالت نے گلوکارہ میشا شفیع کو بھی آئندہ سماعت پر طلب کیا ہے اور شریک ملزمہ لینا غنی ، فریحہ ایوب ، فیضان رضا اور حسیم زمان کی حاضری سے مستقل استثنیٰ کی درخواستیں خارج کر دی ہیں۔ عدالت نے کیس کی سماعت 6 اکتوبر تک ملتوی کردی۔

ایف آئی اے کے مطابق میشا شفیع اور عفت عمر نے علی ظفر کے خلاف ٹوئٹر پر جنسی ہراسانی کے الزامات عائد کیے تھے۔

وفاقی تحقیقاتی ادارے نے گزشتہ سال علی ظفر کی شکایت پر مقدمہ درج کیا تھا۔ اس نے میشا شفیع ، لینا غنی ، عفت عمر ، فریحہ ایوب ، فیضان رضا ، حسیم زمان ، علی گل پیر اور ماہم جاوید پر سوشل میڈیا پر ان کے خلاف مربوط بدنامی کی مہم چلانے کا الزام لگایا تھا۔