Aaj News

جمعرات, جون 13, 2024  
06 Dhul-Hijjah 1445  

جنوری میں آئی ٹی برآمدات 12.4 فیصد کم ہوکر 265 ملین ڈالر رہ گئیں

آئی ٹی کا شعبہ سماجی و اقتصادی اشاریوں کو بہتر بنانے میں مدد کرسکتا ہے، آئی ٹی برآمد کنندہ نعمان سعید
شائع 13 اپريل 2024 10:09am

جنوری میں آئی ٹی برآمدات 12.4 فیصد کم ہوکر 265 ملین ڈالر رہ گئیں۔

معروف آئی ٹی برآمد کنندہ نعمان سعید کے مطابق جنوری 2024ء میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کی برآمدات کے اعداد و شمار تشویشناک ہیں کیونکہ دسمبر 2023ء کے مقابلے میں ماہانہ بنیادوں پر انفارمیشن ٹیکنالوجی کی برآمدات میں 12.4 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں یہ تسلیم کرنا ہوگا کہ آئی ٹی انڈسٹری میں کھلے ذہن کے ساتھ چیلنجز موجود ہیں جو آئی ٹی برآمدات کی مکمل صلاحیت کو بروئے کار لانے کی کوششوں میں رکاوٹ بن رہے ہیں۔

نعمان سعید نے اس بات کا اعادہ کیا کہ آئی ٹی ایک ایسا شعبہ ہے جو روپے اور ڈالر کی برابری کو مستحکم کرکے پاکستان کے سماجی و اقتصادی اشاریوں کو بہتر بنانے میں مدد کرسکتا ہے اور ملکی برآمدات میں تیزی سے اضافے کی وجہ سے افراط زر کے دباؤ پر ڈالر کے کئی گنا زیادہ اثرات مرتب کرسکتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ آئی ٹی ایک ایسی صنعت ہے جسے 5 سے 10 سال کی انکیوبیشن مدت کی ضرورت نہیں ہوتی ہے جیسا کہ ملک کی دیگر برآمدی صنعتوں میں ہوتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ 3.5 بلین ڈالر ملک کی سالانہ آئی ٹی برآمدات کا بالکل ہدف ہونا چاہئے۔

import export

India Pakistan Trade

Information Technology Exports