Aaj News

بدھ, جون 12, 2024  
05 Dhul-Hijjah 1445  

کرغزستان سے طلبا کی وطن واپسی: بچوں کا فیڈبیک اچھا نہیں ہے، محسن نقوی

کرغستان میں ہنگامہ آرائی کا شکار ہونے والے 140 پاکستانی طلبا لاہور پہنچ گئے
اپ ڈیٹ 19 مئ 2024 12:46am

کرغستان میں ہنگامہ آرائی کا شکار ہونے والے 140 پاکستانی طلبا لاہور پہنچ گئے۔ وفاقی وزیرداخلہ محسن نقوی نے لاہور ائیرپورٹ پر طلبہ کو ریسیو کیا۔ محسن نقوی نے کہا کہ بچوں کا فیڈبیک اچھا نہیں ہے، وزیراعظم نے اس واقعہ کے فوری بعد پاکستانی طلبہ کے تحفظ کے لئے تیزی سے اقدامات کئے۔

کرغزستان سے آنے والی پرواز 140 پاکستانی طلبہ کو لے کر لاہور ائیرپورٹ پہنچی تو وفاقی وزیر داخلہ محسن نقوی نے طلبہ کو ریسیو کیا۔۔ وفاقی وزیر داخلہ نے بحفاظت وطن واپس آنے والے طلبہ سے ملاقات میں خیریت دریافت کی اور بشکیک میں پیش آنے والے افسوسناک واقعہ کے بارے معلومات لیں اور مسائل پوچھے۔

محسن نقوی نے کہا کہ کرغزستان میں پاکستانی طلبہ قوم کے بچے ہیں، وزیراعظم نے اس واقعہ کے فوری بعد پاکستانی طلبہ کے تحفظ کے لئے تیزی سے اقدامات کئے۔۔ ہماری سب سے پہلی ترجیح پاکستانی طلبہ کی بحفاظت وطن واپسی ہے۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ دیگر شہروں سے تعلق رکھنے والے طلبہ کو ٹرانسپورٹ کی سہولت دی جائے گی، کرغزستان میں موجود دیگر طلبہ کو بھی پاکستان واپس لایا جائے گا۔۔ محسن نقوی نے طلبا کو بتایا کہ وزیر اعظم کی خصوصی ہدایت پر وفاقی وزراء اسحاق ڈار اور امیر مقام بھی آج کرغزستان جائیں گے اور آج آنے والی پروازوں کے ذریعے مزید طلبہ کو وطن واپس لائیں گے۔

کرغزستان سے پاکستانی طلبا کی وطن واپسی، پہلی پرواز لاہور ایئرپورٹ پہنچ گئی

کرغزستان کے دارالحکومت بشکیک سے پاکستانی طلبہ وطن واپسی کا عمل شروع ہوگیا، پہلی پرواز آدھے گھنٹے کی تاخیر سے 11 بجے لاہور ایئر پورٹ پہنچ گی۔

ابتدائی تفیصلات کے مطابق پہلی پرواز میں 30 پاکستانی طلبہ ہیں جو ہاسٹل سے باآسانی ایئرپورٹ پہنچ گئے جبکہ فلائٹ میں جگہ ہونے کے باعث انہیں باآسانی ٹکٹس مل گئے۔

پرواز کے اے 571 لاہور ایئرپورٹ پر ساڑھے 10 بجے لینڈ کرنا تھی لیکن اب آدھے گھنٹے کی تاخیر سے لینڈ کرے گی۔ علاوہ ازیں محسن نقوی لاہور ائیرپورٹ پر طلبہ کو ریسیو کریں گے۔

ادھر ایئر پورٹ مینجر نے بتایا کہ مسافروں کیلئے بین الاقوامی آمد لاونج میں الگ کاونٹرز بنا دیے گئے ہیں اور طلبا کی تیز ترین امیگریشن کیلئے ایف آئی اے کو بھی احکامات جاری کردیے گئے ہیں۔

واضح رہے کہ کرغزستان میں پاکستانی طلبہ پر حملوں اورانہیں ہراساں کیے جانے سے متعلق ویڈیوز مںظرعام پر آنے کے بعد پاکستان میں موجود طلبہ کے والدین نے اپنے بچوں کی بحفاطت واپسی کا مطالبہ شروع کردیا تھا۔

کرغزستان میں وہاڑی سے تعلق رکھنے والے میڈیکل کے طالب علم عثمان شمشاد اوررضوان بشارت بھی ہاسٹلز میں محصور ہوگئے۔ طلبا نے ویڈیو بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ مقامی لوگ غیر ملکی طلبا پر ہاسٹل اور فلیٹس میں گھس کر تشدد کر رہے ہیں جبکہ میڈیکل کی طالبات کو ہراساں کیا جارہا ہے۔

بعدازاں وزیراعظم شہباز شریف نے کرغزستان کی صورتحال پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے پاکستانی سفیر کو طلبہ کی ہر ممکن مدد کی ہدایت کی تھی۔ وزیراعظم نے کہا تھا کہ جو طلبہ واپس آنا چاہیں، حکومتی خرچ پر فوری واپسی یقینی بنائیں گے اور طلبہ اور والدین کے مابین روابط کیلئے سفارتخانہ ہر قسم کی معاونت فراہم کرے۔

Pakistani Students

Kyrgyzstan

Kyrgyzstan Clash

Kyrgyzstan Pakistani Student