Aaj TV News

BR100 4,979 Decreased By ▼ -47 (-0.94%)
BR30 24,460 Decreased By ▼ -313 (-1.26%)
KSE100 46,636 Decreased By ▼ -284 (-0.61%)
KSE30 18,480 Decreased By ▼ -178 (-0.95%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,218,749 2,928
DEATHS 27,072 68
Sindh 448,658 Cases
Punjab 419,423 Cases
Balochistan 32,707 Cases
Islamabad 103,720 Cases
KP 170,391 Cases

امریکی نیشنل انٹیلی جنس کی خاتون ڈائریکٹر ایورِل ہائنز کہتی ہیں امریکا کےلئے بین الاقوامی دہشتگردی کا سنگین ترین خطرہ افغانستان میں نہیں بلکہ یمن، صومالیہ، شام اور عراق جیسے ممالک میں جنم لے رہا ہے۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق قومی سلامتی کے حوالے سے واشنگٹن میں ہونے والی ایک کانفرنس میں ایورِل نے کہا اگرچہ امریکی انٹیلی جنس ذمے داران اس بات کا بغور جائزہ لے رہے ہیں کہ آیا دہشتگرد جماعتیں ایک بار پھر افغانستان میں نمودار ہوں گی،تاہم اب یہ اس حوالے سے باعث تشویش نہیں کہ یہاں ایسے دہشتگرد پناہ لیں گے جو امریکا کے اندر حملے کر سکیں ۔

انہوں نے مزید کہا ہم افغانستان کو ترجیحات میں سرفہرست نہیں رکھ رہے ہیں بلکہ ہماری نظریں یمن، صومالیہ، شام اور عراق پر ہیں. یہاں ہم زیادہ سنگین خطرات دیکھ رہے ہیں۔

ایورِل ہائنز کے مطابق امریکی انخلاء کے بعد سے افغانستان کے اندر انٹیلی جنس معلومات کے اکٹھا کیے جانے میں کمی آئی ہے۔