Aaj News

جمعہ, جون 21, 2024  
14 Dhul-Hijjah 1445  

آکس اتحاد علاقے میں جوہری اسلحے کی دوڑ میں اضافہ کرے گا: شمالی کوریا

شمالی کوریا نے کہاہےکہ انڈو۔پیسیفک میں نیا امریکی اتحاد اور...
شائع 20 ستمبر 2021 07:01pm

شمالی کوریا نے کہاہےکہ انڈو۔پیسیفک میں نیا امریکی اتحاد اور آسٹریلیا کے ساتھ طے کیا گیا جوہری آبدوز سمجھوتہ علاقے میں جوہری اسلحے کی دوڑمیں اضافہ کرسکتا ہے۔

شمالی کوریا کےسرکاری چینل کےسی این اے کےلئےجاری کردہ بیان میں وزارت خارجہ سے متعلقہ شخصیت نے کہا ہے کہ یہ اقدامات ایشیاء۔پیسیفک علاقے میں اسٹریٹجک توازن کو خراب کرنے اور جوہری اسلحے کی دوڑ میں اضافہ کرنے والے نہایت درجہ ناپسندیدہ اور خطرناک اقدامات ہیں۔

شمالی کوریا کی وزارتِ ذرائع ابلاغ و انفارمیشن نے بھی کہا کہ یہ سمجھوتہ ظاہر کرتا ہے کہ جوہری اسلحے کے پھیلاو کے سدباب کے بین الاقوامی نظام کی بیخ کنی کرنے میں امریکا بنیادی مجرم کی حیثیت رکھتا ہے۔

واضح رہے کہ امریکا کے صدر جو بائڈن نے 16 ستمبر کو برطانیہ کے وزیر اعظم بورس جانسن اور آسٹریلیا کے وزیر اعظم سکاٹ موریسن کے ساتھ منعقدہ آن لائن پریس کانفرنس میں تینوں ممالک کے درمیان آکس نامی نئے سیکیورٹی اتحاد کے قیام کا اور اس اتحاد کے ساتھ امریکااور برطانیہ کے آسٹریلیا کو جوہری آبدوز ٹیکنالوجی فراہم کرنے کا اعلان کیا تھا۔

فرانس کے وزیرخارجہ ژاں ایو لی دریاں اور وزیردفاع فلورینس پارلے نےآسٹریلیا حکومت کے فرانس کے ساتھ طے شدہ آبدوز پروگرام کو ختم کر کے امریکا کے ساتھ جوہری آبدوزوں کی تعمیر کا سمجھوتہ کرنے کے خلاف احتجاج کیا اور اس فیصلے کو فرانس اور آسٹریلیا کے درمیان باہمی تعاون کی روح کے منافی قرار دیا تھا۔

یاد رہے کہ فرانس نے احتجاج کے طور پر صدر امانوئیل ماکرون کے حکم پر کینبرا اور واشنگٹن سے اپنے سفیروں کو بھی مشاورت کےلئے واپس بلا لیا تھا۔

Nuclear Submarines

North Korea

Australia