Aaj TV News

BR100 4,381 Decreased By ▼ -20 (-0.46%)
BR30 16,863 Decreased By ▼ -630 (-3.6%)
KSE100 43,233 Decreased By ▼ -1 (-0%)
KSE30 16,718 Increased By ▲ 20 (0.12%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,286,453 431
DEATHS 28,761 8
Sindh 476,494 Cases
Punjab 443,379 Cases
Balochistan 33,491 Cases
Islamabad 107,848 Cases
KP 180,254 Cases

مظفرآباد:پاکستان میں 8اکتوبر 2005 کے تباہ کن زلزلے کو آج 16 برس مکمل ہو گئے ،زلزلے سے70 ہزار سے زائد افراد جاں بحق ہوئے تھے۔

8اکتوبر 2005کے قیامت خیز زلزلے کو 16برس بیت گئے،پاکستانی قوم اس سلسلے میں آج اپنے پیاروں کی 16ویں برسی آج منارہی ہے،خوفناک زلزلہ آج بھی ذہنوں میں تازہ ہے ، زلزلے نے لمحوں میں بستیاں زمین بوس کردیں تھیں۔

اسلام آباد میں2005 کے زلزلے میں جاں بحق افراد کی یاد میں دعائیہ تقریب منعقد کی گئی، جہاں زلزلے میں جاں بحق افراد کی یاد میں ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی گئی، تقریب میں مارگلہ ٹاور کے باہر جاں بحق افراد کے ورثا اور سول سوسائٹی کے ممبران بھی شریک ہوئے۔

راولاکوٹ کے ڈسٹرکٹ کمپلیکس میں بھی دعائیہ تقریب کا انعقاد کیا گیا، جہاں ایک منٹ کی خاموشی کے ساتھ سائرن بھی بجایا گیاجبکہ بالاکوٹ گورنمنٹ ہائی سکول میں شہداء زلزلہ کلئےت قرآن خوانی کا اہتمام کیا گیا۔

8اکتوبر کے خوفناک زلزلے سے70 ہزار سے زائد افراد جاں بحق اور ہزاروں زخمی ہوئے تھے ،زلزلے سے مظفر آباد اور باغ کے بیشتر علاقے متاثر ہوئے تھے جبکہ زلزلے سے اسلام آباد کے مارگلہ ٹاورز کا ایک حصہ زمین بوس ہو گیا تھا،زلزلےکےباعث خیبر پختوا اور آزاد کشمیر میں بڑے پیمانے پر تباہی آئی تھی۔

رپورٹ کے مطابق ریکٹر اسکیل پر یہ زلزلہ زیر زمین 15 کلومیٹر کی گہرائی میں آیا جس کی شدت7 اعشاریہ6 ریکارڈ کی گئی تھی، تباہ کن زلزلے سے بالاکوٹ کا95 فیصد انفراسٹرکچر تباہ ہوا جبکہ مظفرآباد ، باغ، ہزارہ اور راولاکوٹ میں ہزاروں افراد متاثر ہوئے۔

8اکتوبرکے زلزلے سے 5لاکھ افراد بے گھر بھی ہوئے تھے، اس زلزلے میں مظفرآباد کا علاقہ سب سے زیادہ متاثر ہوا جبکہ مظفر آباد میں مکانات، اسکولز، کالجز، دفاتر، ہوٹلز، اسپتال، مارکیٹیں، پلازےملبے کا ڈھیر بن گئے تھے۔

خیبرپختونخوا میں زلزلے سے متاثرہ اسکول 16 سال بعد بھی تعمیر نو کے منتظر

ادھرخیبرپختونخوا میں 2005 کےزلزلے سے متاثرہ اسکول 16 سال بعد بھی تعمیر نو کے منتظر ہیں۔

ذرائع محکمہ تعلیم نے ہم نیوز کلو بتایا کہ 8اکتوبر2005 کےزلزلے میں خیبرپختونخوا کے 554 اسکولز تباہ ہوئے تھے،مانسہرہ کے 161 اسکولز بھی متاثر ہوئے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ خیبرپختونخوا میں 354 اسکولوں کی تعمیر نو تاحال نہ ہوسکی،فنڈز کی کمی کی وجہ سے ایرا نے کام ادھورا چھوڑ دیا تھا، صوبائی حکومت اب تک 200 اسکولوں کی تعمیر نو کرچکی ہے،باقی اسکولوں میں بھی تعمیراتی کام جاری ہے۔

محکمہ تعلیم کا کہنا ہے کہ فنڈز کی کمی نہیں ہے، تعمیر نو کا کام جلد مکمل کرلیا جائے گا۔