Aaj News

منگل, مئ 21, 2024  
12 Dhul-Qadah 1445  

پارلیمان کے کام کوروکناغیر آئینی ہے، مسلم لیگ ن

کیا خود سے متعلق کیس کو سننا مفادات کا ٹکراؤ نہیں، لیگی رہنما
شائع 02 مئ 2023 03:10pm

مسلم لیگ ن کے رہنماؤں کا کہنا ہے کہ پارلیمان کا کام قانون سازی کرنا ہے، اور پارلیمان کے کام کو روکنا غیر آئینی ہے۔

ملک احمد خان کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے معاون خصوصی وزیراعظم عطا تارڑ کا کہنا تھا کہ پارلیمان کا کام قانون سازی کرنا ہے، پارلیمنٹ نے سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر بل پاس کیا اور عدالت کی جانب سے اسے روکا گیا، پارلیمان کے کام کو روکنا ہم سمجھتے ہیں غیر آئینی ہے۔

عطا تارڑ کا کہنا تھا کہ عدالت میں سماعت کے دوران چند اعتراضات اٹھائے گئے، جس پر عدالت نے تحریری جواب طلب کیا ہے، پاکستان بار نے جسٹس مظاہر کے بینچ میں شامل ہونے پر اعتراض اٹھایا ہے، اس معاملے پر7 سینئر ججز کا بینچ بنایا جائے، اسی ایکٹ کے تحت چیف جسٹس کے اختیارات کو محدود کیا گیا ہے، کیا خود سے متعلق کیس کو سننا مفادات کا ٹکراؤ نہیں، انصاف ہوتا ہوانظرآناچاہئے، پرویز الٰہی کی ضمانت کیس میں بھی اعتراضات ہیں۔

ملک احمد خان

معاون خصوصی ملک احمد خان کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کے کوڈ آف کنڈکٹ کی پابندی ہونی چاہئے، پارلیمان کے پاس اپنے اختیارات موجود ہیں، قانون میں از خود نوٹس پر کوئی قدغن نہیں لگائی گئی، سیاسی قیادت نے یہ طے کیاانتخابات ایک وقت پرہونےچاہیئے۔

ملک احمد خان نے مزید کہا کہ عمران خان اوراس کی پارٹی کو ہر طرح کا ریلیف فراہم کیا جا رہا ہے، انہوں نے ایک اسٹے کے ذریعے کرپشن کیسز کی تحقیقات کو رکوا لیا، چیئرمین پی ٹی آئی نے علاج کے چندے کو سیاسی مقاصد کیلئےاستعمال کیا، وہ خود اعتراف کر چکے ہیں کہ انہوں نے پیسے سیاست کیلئے استعمال کئے۔

معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ 4 سال تک ملک پرقبضہ گروپ مسلط رہا، پنجاب میں پرویزالٰہی اور اس کی کابینہ نے کرپشن کے ریکارڈ قائم کئے۔

PMLN

Atta Tarrar

malik ahmed khan

Politics May 2 2023