Aaj News

پیر, مارچ 04, 2024  
22 Shaban 1445  

چینی برآمد کرنے پر نواز لیگ اور پیپلز پارٹی کے سابق وزرا آمنے سامنے

احسن اقبال کی جانب سے موردالزام ٹھہرانے پر نوید قمر کا جواب
اپ ڈیٹ 04 ستمبر 2023 04:17pm
تصویر/ فائل
تصویر/ فائل

احسن اقبال کے بیان پرردعمل دیتے ہوئے پی پی رہنما اور سابق وفاقی وزیر برائے تجارت نوید قمر نے واضح کیا ہے کہ چینی برآمد کرنے کی اجازت کوئی ایک وزارت نہیں دیتی۔

لیگی رہنما نے جیو نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہاتھا کہ ملک سے چینی برآمد کرنے کی اجازت پیپلزپارٹی کے نوید قمرکی وزارت تجارت نے دی تھی۔ سابقہ حکومت اتحادی تھی اس لیے ساری ذمہ داری ن لیگ نہیں اٹھا سکتی۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ اسمگلنگ، کارٹلائزیشن اور مافیا کو توڑ نے کی ضرورت ہے۔

اس بیان پر ردعمل دیتے ہوئے جیو نیوز سے گفتگومیں نوید قمر نے کہا کہ میرٹ پردیکھنا ہے کہ چینی کی برآمد کا فیصلہ درست تھا یا نہیں، چینی برآمد کرنے کی منظوری کوئی ایک وزارت نہیں دیتی۔

نوید قمر نے کہا کہ ای سی سی اجلاس میں چینی برآمد کرنے کا معاملہ سامنے آیا تھا، چینی کی اضافی مقدارموجود ہونے کے باعث برآمدگی کی اجازت دی تھی۔ پیداوارزیادہ ہو تو درآمد ضرور کرنا چاہئیے۔

سابق وفاقی وزیر نے کہا کہ چینی ذخیرہ اندوزوں نے چینی روکی ہوئی ہے۔ اسمگلنگ اورذخیرہ اندوزی کے باعث ہی چینی کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے،

انہوں نے بتایاکہ چینی کیزیادہ تراسمگلنگ ایرانی بارڈر کے ذریعے کی جاتی ہے۔ ملک میں چینی کی کافی مقدارموجود ہے، صوبائی حکومتوں کو ذخیرہ اندوزی کیخلاف حرکت میں آنا چاہیے۔

واضح رہے کہ ملک میں چینی کی قیمت میں آئے روز اضافہ ہورہا ہے جس کی بڑی وجہ چینی کو برآمد کرنا ہے۔ پاکستان کے مختلف شہروں میں چینی کی قیمتیں تاریخ کی بلندترین سطح پر پہنچی ہوئی ہیں۔

Ahsan Iqbal

sugar price

Comments are closed on this story.

تبصرے

تبولا

Taboola ads will show in this div