Aaj News

پیر, مارچ 04, 2024  
23 Shaban 1445  

جب بیچ پرواز ہوائی جہاز کی چھت ہی اُڑ گئی

پائلٹ نے کس طرح جہاز کو اتارا جان کر آپ حیران رہ جائیں گے
شائع 22 نومبر 2023 09:08pm

ہماری اس دنیا میں کئی معجزے دیکھنے اور سننے کو ملتے ہیں، جن میں لوگ موت کو چھو کر واپس آتے ہیں۔ ایسا ہی ایک واقعہ 1988 میں پیش آیا تھا جب دوران پرواز ہوائی جہاز کی پوری چھت ہی اُڑ گئی۔

ذرا تصور کریں کہ آپ فلائٹ میں سفر کر رہے ہوں اور اچانک سر پر سے چھت ہی غائب ہوجائے۔

یہ حادثہ ”الوہا ایئر لائنز“ (Aloha Airlines) کی فلائٹ 243 کے ساتھ پیش آیا تھا، جو اپنی چھت کا ایک حصہ کھونے کے باوجود بحفاظت لینڈ کر گئی۔

واشنگٹن پوسٹ کے مطابق 28 اپریل 1988 کو الوہا ایئرلائنز کی چھت کا ایک بڑا حصہ اچانک ٹوٹ کر ہوا میں اڑ گیا، اس وقت جہاز میں 89 مسافر اور چھ عملے کے ارکان سوار تھے۔

یہ ایک دو انجن اور 110 سیٹوں والا بوئنگ 737-200 جیٹ تھا جو 40 منٹ دورانیے کی پرواز کے آدھے راستے پر تھا، کہ کیبن کا دباؤ اچانک کم ہو گیا اور بوئنگ 737 کے اس حصے جسے فیوزیلج کہا جاتا ہے، اس کی چھت پھٹ گئی۔ اب مسافر بحر الکاہل کے اوپر 24 ہزار فٹ کی بلندی پر تیز ہواؤں کے رحم و کرم پر تھے۔

چھت کو غائب ہوتا اور نیلا آسمان دیکھ کر عملے کے باقی ارکان اور مسافر خوف سے چیخنے لگے اور انہیں یقین ہو گیا کہ وہ زندہ نہیں بچ پائیں گے۔

لیکن پائلٹ کسی طرح تباہ شدہ طیارے کو 24 ہزار فٹ کی بلندی تک لے گئے اور جلتے انجن ساتھ جہاز کو لینڈ کرایا۔

فیڈرل ایوی ایشن ایڈمنسٹریشن کے مطابق کیپٹن نے فرسٹ آفیسر سے کنٹرول سنبھال لیا اور ماؤئی کی طرف ہنگامی طور پر اترنے کا آغاز کیا اور واقعے کے تیرہ منٹ بعد کامیابی سے وہاں اترا۔

زمین پر موجود ایمرجنسی اہلکاروں کو یقین نہیں آیا کہ وہ تباہ شدہ طیارے کے قریب پہنچ کر کیا دیکھ رہے تھے۔

جہاز میں سوار 95 افراد میں سے ایک ہلاک اور آٹھ شدید زخمی ہوئے۔ معجزانہ طور پر جہاز میں موجود باقی تمام افراد اس واقعے میں محفوظ رہے۔

 حادثے میں ہلاک ائیرہوسٹس جس کی لاش نہ مل سکی
حادثے میں ہلاک ائیرہوسٹس جس کی لاش نہ مل سکی

موت صرف ایئر ہوسٹس کی ہوئی تھی جس نے بیلٹ نہیں باندھی ہوئی تھی، اس وقت تمام مسافر بیلٹ باندھے بیٹھے تھے۔ ایئر ہوسٹس کی لاش کبھی نہیں ملی۔

Aloha Airlines

Flight 243

Fuselage Roof

Comments are closed on this story.

تبصرے

تبولا

Taboola ads will show in this div