Aaj News

بدھ, جون 12, 2024  
05 Dhul-Hijjah 1445  

بلوچستان میں چار جماعتی اتحاد کی مبینہ دھاندلی کیخلاف ہڑتال ختم

بلوچستان کی تمام اہم قومی شاہراہیں کھول دی گئیں
شائع 18 فروری 2024 07:04pm

عام انتخابات میں مبینہ دھاندلی کے خلاف بلوچستان کی تمام اہم قومی شاہراہوں پر پہیہ جام ہڑتال اتوار کی شام چار بجے ختم کردی گئی۔

عام انتخابات میں مبینہ دھاندلی کے خلاف احتجاج کی کال قوم پرست جماعتوں پر مشتمل چار جماعتی اتحاد، پشتونخوا ملی عوامی پارِٹی، نیشنل پارٹی، بلوچستان نیشنل پارٹی اور ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی نے دی تھی۔

ان تمام سیاسی جماعتوں کے کارکنوں کی جانب سے شاہراہوں کو مختلف علاقوں میں بند کیا گیا جس کی وجہ سے بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ کا چمن، ڈیرہ اسماعیل خان، کراچی، تفتان اور جیکب آباد سے رابطہ منقطع رہا۔

بی بی سی کے مطابق اتوار کی شام چار بجے تمام تر مرکزی شاہراہوں کو کھول دیا گیا۔

اسی طرح کوسٹل ہائی وے سمیت اہم شاہراہوں کو بلوچستان کے دیگر علاقوں میں بھی ان جماعتوں کے کارکنوں نے بند کیا۔ جس کے باعث لوگوں کو پریشانی اور مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

خیال رہے کہ ن لیگ کے سوا بلوچستان میں انتخابات میں حصہ لینے والی تمام قابل ذکر سیاسی جماعتوں نے عام انتخابات میں مبینہ دھاندلی کے خلاف احتجاج کیا ہے۔

دوسری جانب بلوچستان کے نگران وزیر اطلاعات جان اچکزئی کا کہنا ہے کہ چار سیاسی جماعتوں کے اتحاد کی پہیہ جام ہڑتال ناکام ہوگئی۔

ان کا کہنا تھا کہ ’بلوچستان کے سردار اور نواب عام لوگوں کو 2024 کے انتخابات میں مسترد کرنے کی سزا دے رہے ہیں۔‘

Election 2024

GENERAL ELECTION 2024

election 2024 results

Balochistan Election Results

Pakistan Elections 2024

Balochistan Protest