Aaj News

اتوار, جون 23, 2024  
16 Dhul-Hijjah 1445  

حماد اظہر کو کہیں لے کر گئے یا زبردستی بیان لیا تو نہیں مانیں گے، عمر ایوب

حماد اظہر اس وقت کہاں ہیں؟
اپ ڈیٹ 23 مئ 2024 10:26pm

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے جنرل سیکریٹری اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف عمر ایوب کا کہنا ہے کہ انٹیلی جنس ایجنسیوں کو سیاست میں ملوث ہونے کے بجائے اپنا پیشہ وارانہ کام کرنا چاہیے۔

راولپنڈی میں اڈیالہ جیل کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عمر ایوب نے کہا کہ آج بانی پی ٹی آئی سے ملاقات کی ہے، عمران خان نے اس بات پر زور دیا کہ ملکی معیشت کی کشتی ڈوب رہی ہے، نجی شعبوں پر جو قرضے تھے وہ 86 فیصد کم ہوگئے ہیں لیکن شرح سود کم نہیں ہورہا، ہماری ایکسپورٹ پر فرق پڑا، گندم کا بحران پیدا ہوا، گندم اسکینڈل دیکھ لیں، کسانوں کی فصلیں تیار تھیں، ان سے گندم نہیں خریدی گئی اور باہر سے 450 ارب روپے کی گندم منگوائی گئی۔

اپوزیشن لیڈر کا کہنا تھا کہ نوازشریف یا جو بھی جیل میں تھے ان کی سب سے ملاقاتیں ہوتی تھیں لیکن عمران خان سے ملاقات نہیں کرنے دی جاتی، اور یہ ملاقات بھی 20 سے 25 منٹ سے زیادہ نہیں ہوتی، اس کے خلاف ہم عدالت جائیں گے۔

عمر ایوب نے کہا کہ کشمیر میں ہونے والے فسادات کی ذمہ داری وفاقی حکومت پر عائد ہوتی ہے، 3 ارب روپے بجلی اور گندم کی سبسڈی میں ریلیز کرنے تھے اور وہ انہوں نے نہیں کیے، شہباز حکومت نے کشمیر کے عوام کے پیٹ پر ضرب لگائی اوراس کا خمیازہ آج پورا ملک بھگت رہا ہے۔

یاسمین راشد کا سروسز اسپتال لاہور میں علاج جاری، درد کی شکایت

انہوں نے کہا کہ لوگ ہمیں کہہ رہے ہیں کہ پاکستان کے آزاد کشمیر میں کیا ہورہا ہے، بھارت انگلیاں اٹھا رہا ہے اور پوری دنیا میں ہمیں نشانہ بنارہا ہے، جس سے کشمیر کاز کو نقصان ہوا اور اس کی ذمہ دار یہ فارم 47 والی وفاقی حکومت ہے۔

عمر ایوب کا کہنا تھا کہ ہماری انٹیلی جنس ایجنسیوں کو سیاست میں ملوث ہونے کے بجائے اپنا پیشہ وارانہ کام کرنا چاہیے، کیوں کہ اس سے نہ صرف یہ ادارے کمزور ہوں گے بلکہ پاکستان کو بھی نقصان ہوگا۔

تحریک انصاف کا رؤف حسن پر حملے کی تحقیقات جوڈیشل کمیشن سے کروانے کا مطالبہ

انہوں نے کہا کہ 6 ججز نے تحریری طور پر چیف جسٹس پاکستان، سپریم جوڈیشل کونسل کو خط لکھ کر انٹیلی جنس ایجنسیوں خاص طور پر آئی ایس آئی کے بارے میں بتایا کہ ان کے گھریلو لوگوں پر دباؤ ڈالا گیا ان کو زدوکوب کیا گیا۔

پی ٹی آئی رہنما نے مزید کہا کہ فرد واحد کے فیصلوں سے ملک دو لخت ہوا اور اس وقت ہمیں قومی یکجہتی کی ضرورت ہے، ہم اپنی اتحادی جماعتوں کے ساتھ ملکر تحریک تحفظ آئین پاکستان کے ذریعے جلسے کرتے رہیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ کسی کو غائب کیا تو شدید مذمت کریں گے، اسمبلیوں کے اندر احتجاج ہوگا، سڑکوں پر بھی نکلیں گے، حماد اظہر کو کہیں لے کر گئے یا زبردستی بیان لیا تو نہیں مانیں گے۔

خیال رہے کہ پی ٹی آئی رہنما گزشتہ روز منظر عام پر آنے کے بعد پشاور پہنچ گئے ہیں۔

حماد اظہر رات 10 بج کر 30 منٹ پر وزیراعلیٰ ہاؤس خیبرپختونخوا میں داخل ہوئے۔

حماد اظہر کا اسلام آباد پولیس کی جانب سے انکی گرفتاری کی کوشش سے متعلق کل ہائی کورٹ بھی جانے کا امکان ہے۔

umar ayub

Pakistan Tehreek Insaf (PTI)