Aaj News

پیر, جون 24, 2024  
17 Dhul-Hijjah 1445  

شرمین عبید چنائے کی 'ستارہ' نیٹ فلیکس پر پہلی پاکستان اینیمیٹڈ فلم

شائع 30 اکتوبر 2019 04:29pm

پاکستانی کی آسکر ایوارڈ یافتہ فلم ساز شرمین عبید چنائے کی اینیمیٹڈ فلم 'ستارہ: لیٹ گرلز ڈریم' ویب اسٹریمنگ چینل 'نیٹ فلیکس' پر 15 نومبر کو ریلیز کی جائے گی۔ فلم نے نیٹ فلیکس پر ریلیز ہونے والی پہلی پاکستانی فلم ہونے کا اعزاز حاصل کرلیا۔

کسی ڈائیلاگ کے بغیر ایک کمسن لڑکی کی زندگی کی مکمل داستان سناتی اس پاکستانی اینیمیٹڈ فلم 'ستارہ' کو شرمین عبید چنائے نے خود تحریر کیا اور ہدایتکاری دی ہے۔

پندرہ منٹ کی اس شارٹ اسٹوری فلم کا ٹریلر بھی جاری ہوچکا ہے جس میں لاہور کے پرانے شہر کو دکھایا گیا ہے۔

اس شارٹ اینیمیٹڈ فلم میں ایک 14 سالہ بچی کی کہانی دکھائی گئی ہے جو پائلٹ بننا چاہتی ہے لیکن اس کی شادی زبردستی کروادی جاتی ہے جس کی وجہ سے اس کے خواب ٹوٹ جاتے ہیں۔

یہ ایک ایسے خاندان کی کہانی ہے جہاں لڑکیاں اب بھی اپنے خوابوں کو پورا کرنے کے لئے جدوجہد کر رہی ہیں۔

اس فلم کا میوزک ایمی ایوارڈ یافتہ 'لورا کارپ مین' نے کمپوز کیا ہے جبکہ فلم کے ایگزیکٹو پروڈیوسرز میں خواتین کے حقوق کی مشہور کارکن گلوریا اسٹینیم، اور کوکو اور ٹوائے اسٹوری 3 کی اکیڈمی ایوارڈ یافتہ پروڈیوسر ڈارلا اینڈرسن شامل ہیں۔

'ستارہ' سمیت نیٹ فلیکس پر دیگر ممالک کی سماجی مسائل پر بنائی گئی اینیمیٹڈ فلموں کو ریلیز کیا جائے گا اور ان فلموں کی ریلیز کا سلسلہ 15 نومبر 2019 سے شروع ہوگا جو آئندہ برس کے آغاز تک جاری رہے گا۔