Aaj News

بدھ, فروری 28, 2024  
17 Shaban 1445  

شعیب ملک نے کھیل میں بہتری لانے کیلئے بابر اعظم کو کیا مشورہ دیا؟

بابر اعظم کیلئے میری مخلصانہ رائے ہے جو میں پہلے بھی دے چکا ہوں، سابق کپتان
شائع 16 اکتوبر 2023 10:56pm

پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شعیب ملک نے کپتان بابر اعظم کو کپتانی چھوڑنے اور ٹیم کے کھلاڑی کے طور پر کھیلنے کا مشورہ دے دیا۔

آئی سی سی کرکٹ ورلڈکپ میں بھارت سے مقابلے کے بعد شعیب ملک نے پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان کو کپتانی چھوڑ کر بطور کرکٹر کھیلنے کا مشورہ دیا ہے۔

نجی ٹی وی کے پروگرام میں شرکت کے دوران شعیب ملک نے ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ بابر اعظم کے لیے میری مخلصانہ رائے ہے جو میں پہلے بھی دے چکا ہوں کہ بابر اعظم کو کپتانی چھوڑ دینی چاہیئے۔

انہوں نے واضح کیا کہ وہ بابر اعظم کے بارے میں ایسی رائے رکھتے ہیں، اس لیے نہیں کہ پاکستان بھارت سے ہار گیا اور نہ ہی اس کی وجہ یہ ہے کہ ٹیم بڑے فرق سے ہار گئی، لیکن ان کا ماننا ہے کہ 29 سالہ کپتان کپتانی کے بغیر بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ’میں نے بات کا باریک بینی سے جائزہ لیا ہے جس کی بنیاد پر میں یہ کہہ رہا ہوں کہ بابر اعظم بطور کرکٹر اپنے اور ٹیم کے لیے شاندار پرفارمنس دے سکتے ہیں۔‘

شعیب ملک کا کہنا تھا کہ بابر اعظم بطور کپتانی سے ہٹ کر نہیں سوچتے اور کسی بھی کرکٹر کو اپنی قیادت کو بیٹنگ کی صلاحیتوں کے ساتھ نہیں ملانا چاہیے کیونکہ قیادت اور بیٹنگ یہ 2 مختلف چیزیں ہیں۔ وہ طویل عرصے سے کپتان ہیں لیکن ان میں بہتری نہیں آ رہی ہے۔

ٹیم کی کارکردگی پر بات کرتے ہوئے 41 سالہ شعیب ملک نے کہا کہ اگر ہماری ٹیم کا کوئی میچ پلان کے مطابق چلتا ہے تو ہمارے کھلاڑی اٹیک کرتے ہیں لیکن اگر کچھ منصوبے سے ہٹ کیا جاتا ہے تو وہ دفاعی کھیل کھیلنے لگتے ہیں۔

شعیب ملک کے مطابق بابر اعظم کو کھلاڑیوں کے ساتھ ملاقات کرنی چاہیے۔ بھارت سے شکست کے باوجود شعیب ملک نے بابر اعظم کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے انہیں یاد دلایا کہ ٹورنامنٹ ابھی ختم نہیں ہوا، بہت سے میچ باقی ہیں، اپنے آپ کو مضبوط رکھیں۔

مزید پڑھیں

مکی آرتھر کے بیان پر سابق کرکٹرز کیوں بھڑک اٹھے؟

بھارت سے شکست کے بعد پاکستان کے کپتان بابراعظم نے کیا کہا؟

babar azam

Pakistan Cricket Team

Shoaib Malik

India vs Pakistan

Pakistan vs India

ODI World Cup

world cup 2023

ICC ODI WORLD CUP 2023

Comments are closed on this story.

تبصرے

تبولا

Taboola ads will show in this div