Aaj News

اسرائیلی حملوں میں خواتین و بچوں سمیت مزید 63 فلسطینی شہید

غزہ کے شہروں میں حماس کے ٹھکانوں پر صہیونی فوج کی بمباری میں 2 اسرائیلی یرغمالی بھی مارے گئے
شائع 12 فروری 2024 09:05am

فلسطینی علاقوں پر اسرائیلی افواج کی وحشیانہ بمباری اور گولا باری جاری ہے۔ نئے حملوں میں شہید ہونے والوں میں خواتین اور بچوں کی تعداد بھی غیر معمولی ہے۔ بہت سے زخمیوں کو کویتی اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

رفح بارڈر کے علاقے میں اسرائیل کے نئے حملے میں 63 فلسطینی شہید ہوگئے۔ شہدا میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔

اس سے قبل حماس نے ایک بیان میں بتایا کہ غزہ پر اسرائیلی فوج کی تازہ بمباری میں 2 اسرائیلی یرغمالی بھی ہلاک ہوئے۔ اس حملے میں درجنوں فلسطینی زخمی ہوئے ہیں۔

حماس کے جانباز غزہ کے متعدد شہروں سے اسرائیلی فوج پر حملے جاری رکھے ہوئے ہیں۔ غزہ میں اشیائے ضرورت کی قلت خطرناک شکل اختیار کرگئی ہے۔ اشیائے خور و نوش کے علاوہ دواؤں کی بھی شدید قلت ہے۔ اسپتالوں میں ضروری سامان کی شدید قلت کے باعث علاج میں غیر معمولی دشواریوں کا سامنا ہے۔

یاد رہے کہ اسرائیلی فوج کئی دن سے رفح بارڈر کے علاقے میں بمباری کر رہی ہے تاکہ غزہ کے پریشاں حال شہری مصر میں داخل نہ ہوسکیں۔ مصر کی حکومت نے سیکیورٹی کے انتظامات سخت تر کردیے ہیں تاکہ رفح بارڈر سے لوگ اس کی سرزمین پر قدم نہ رکھیں۔

یہ بھی پڑھیں :

غزہ میں اسپتال پر حملہ، 500 سے زائد فلسطینی شہید، امریکا نے اسرائیل کو بری الذمہ قرار دے دیا

اسرائیل کے غزہ پر ایک رات میں ڈھائی ہزار حملے، شہید فلسطینیوں کی تعداد 10 ہزار سے تجاوز کرگئی

مغربی میڈیا نے بتایا ہے کہ اسرائیلی فوج کی بہیمانہ کارروائیوں اور ان میں بہت بڑے پیمانے پر جانی نقصان کے باوجود حماس شدید مزاحمت کر رہی ہے اور کئی شہروں سے حملے کرکے یہ پیغام دے رہی ہے کہ وہ اب بھی موجود ہے اس میں دم خم ہے۔ حماس چاہتی ہے کہ جنگ بندی سے قبل اُس کی حیثیت تسلیم کی جائے۔ اسرائیل فوج کی کارروائیوں کا جواب دے کر حماس مذاکرات کی میز پر اپنی پوزیشن مضبوط بنان چاہتی ہے۔

Gaza

RAFAH BORDER

NEW HEAVY BOMBARDMENT

WOMEN AND KIDS KILLED

Comments are closed on this story.

تبصرے

تبولا

Taboola ads will show in this div