Aaj News

منگل, مئ 28, 2024  
19 Dhul-Qadah 1445  

نیب نے قومی اسمبلی سیکریٹریٹ میں غیر قانونی بھرتیوں کا نوٹس لے لیا

خط میں سابق اسپیکر اسد قیصر اور پرویز اشرف کے ادوار میں کی گئیں بھرتیوں کی تفصیلات مانگی گئیں
شائع 24 اپريل 2024 04:55pm

قومی اسمبلی سیکریٹریٹ میں غیر قانونی بھرتیوں کے معاملے پر قومی احتساب بیورو (نیب) نے نوٹس لے لیا۔

ذرائع کے مطابق نیب کی جانب سے خط قومی اسمبلی سیکریٹریٹ کو موصول ہوا ہے، جس میں 2018 سے مارچ 2024 تک قومی اسمبلی سیکریٹریٹ میں کی جانے والی بھرتیوں کی تفصیلات طلب کی گئی ہیں۔

خط میں سابق اسپیکر اسد قیصر اور راجہ پرویز اشرف کے ادوار میں کی گئیں بھرتیوں کی تفصیلات مانگی گئی ہیں۔

خط میں اسپیکر قومی اسمبلی سے 2018 سے مارچ 2024 تک کی جانے والی بھرتیوں کے طریقہ کار پر جواب طلب کیا گیا ہے کہ آیا بھرتیوں کی وزارتِ خزانہ سے منظوری لی گئی یا نہیں، بھرتیوں کے لیے ٹیسٹ اور انٹرویز کیے گئے یا نہیں؟

الیکشن کمیشن نے قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کو بھرتیوں سے روک دیا

نیب نے یہ سوال بھی اٹھایا ہے کہ اخبارات میں بھرتیوں کے اشتہارات شائع ہوئے یا نہیں، ڈیلی ویجز، کنٹریکٹ اور مستقل رکھے جانے والے افراد سے متعلق الگ الگ تفصیلات دینے کی ہدایت کی گئی ہے۔

ذرائع کے مطابق اسپیکر آفس نے نیب خط موصول ہونے کی تصدیق کی ہے، دونوں سابق اسپیکرز کے دور میں بھرتیوں کا مکمل ڈیٹا مرتب کیا جا رہا ہے۔

قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کو اسکیل 16 اور 17 میں بھرتیوں سے روک دیا گیا

NAB

اسلام آباد

notice

national assembly secretariat

illegal recruitment