Aaj News

بدھ, جون 12, 2024  
06 Dhul-Hijjah 1445  

اسرائیلی وزیراعظم کا اعتراف: ’رفح کیمپ پر حملہ افسوسناک ہے، تحقیقات کررہے ہیں‘

پیرس، نیویارک، بارسلونا، تیونس اور مانچسٹر سمیت دنیا کے مختلف شہروں میں اسرائیل مخالف مظاہرے
اپ ڈیٹ 28 مئ 2024 03:45pm

اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو نے غزہ کے رفح میں کیمپ کو نشانہ بنانے والا مہلک حملہ کو ”افسوسناک حادثہ“ قرار دے کر کہا ہے کہ حکومت اس کی تحقیقات کررہی ہے۔ دوسری جانب پاکستان سمیت جرمنی، کینیڈا، فرانس، ناروے اسرائیلی اقدام کی سخت مذمت کرتے ہوئے حملے کی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔

عالمی میڈیا کے مطابق بنجمن ن یتن یاہو نے پارلیمنٹ کو بتایا کہ ”رفح میں ہم نے 10 لاکھ غیر متعلقہ شہریوں کو نکالا اور ہماری پوری کوششوں کے باوجود کل ایک المناک حادثہ پیش آیا۔“

انہوں نے مزید کہا کہ ”ہم اس معاملے کی تحقیقات کر رہے ہیں“۔ واضح رہے کہ اسرائیل نے رفح میں پناہ گزینوں کے ایک کیمپ پر حملہ کیا جس میں 75 فلسیطنی شہید اور 200 سے زائد زخمی ہوگئے تھے۔ اطلاعات کے مطابق شہید ہونے والوں میں بڑی تعداد بچوں کی ہے۔

حملہ دل دہلا دینے والا، ترجمان امریکی قومی سلامتی کونسل

ادھر امریکی صدر جوبائیڈن نے تاحال رفح پر اسرائیلی حملے پر کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے جبکہ امریکی قومی سلامتی کونسل کے ترجمان نے کہا کہ یہ حملہ ”دل دہلا دینے والا“ تھا۔

انہوں نے کہا کہ امریکا اس بات کا تعین کرنے کے لیے اسرائیل کے ساتھ ”مشغول“ ہے کہ کیا ہوا تھا؟

اقوام متحدہ نے آج ایک ہنگامی اجلاس طلب

رفح کیمپ پر حملے کے بعد عالمی سطح پر اسرائیل کو شدید مذمت کا سامنا ہے۔ اقوام متحدہ نے آج ایک ہنگامی اجلاس طلب کیا ہے جس سے اسرائیل اور بالخصوص امریکا پر غیر معمولی دباؤ میں اضافہ ہوگا کہ وہ اسرائیل کو ہتھیار کی فراہمی روک دے۔

**مظاہرین کا اسرائیل کے خلاف سخت اقدامات کا مطالبہ **

پیرس، نیویارک، بارسلونا، تیونس اور مانچسٹر سمیت دنیا کے مختلف شہروں میں فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کیلئے مظاہرے کیے گئے، مظاہرین نے عالمی برادری سے اسرائیل پر سخت پابندیوں کا بھی مطالبہ کردیا۔

نیویارک میں فلسطینی حامیوں کا بارش کے باوجود مارچ کا انعقاد کیا اورمانچسٹر یونیورسٹی کے تاریحی کیمپس پر اسرائیل مخالف مظاہرین نے فلسطینی پرچم لہرا دیا۔

بارسلونا میں یورپی کمیشن کے صدر دفتر اور میڈرڈ میں وزارت خارجہ کے باہر سینکڑوں مظاہرین نے اسرائیل کے خلاف سخت پابندیوں پر زور دیا۔

علاوہ ازیں تیونس میں ہزاروں افراد نے فلسطینی پرچم لہرا دیا عالمی برادری سے اسرائیلی حملے رکوانے کا کہا۔ ترک شہر استنبول میں مظاہرین نے اسرائیلی قونصیلیٹ کے بیرونی حصے کو آگ لگادی۔

جاپانی وزارت خارجہ کے باہر بھی اسرائیلی جارحیت کے خلاف احتجاج کیا گیا۔

بیشتر شہادتیں جھلسنے کے باعث ہوئیں

اسرائیل نے ایسے ہتھیار استعمال کیے جس سے کیمپ میں آگ لگ گئی۔ فلسطینی میڈیا نے بتایا کہ بیشتر شہادتیں جھلسنے کے باعث ہوئیں۔ فلسطینی ذرائع کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فوج کے تازہ ترین حملے میں زخمی ہونے والے کئی افراد کی حالت نازک ہے۔ شہادتوں میں مزید اضافے کا خدشہ ہے۔

دوسری جانب رفح میں اسرائیلی فضائی حملوں پر پاکستان سمیت دنیا بھرنے مذمت کی ہے۔ جرمنی، کینیڈا، فرانس، ناروے نے حملے کی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔

Israel Gaza War