Aaj News

اتوار, جون 23, 2024  
16 Dhul-Hijjah 1445  

لاہور ہائیکورٹ: سنگین کیسز کی منظوری کیخلاف عمران خان کی درخواست پر اعتراضات عائد

وکیل کی جانب سے مہلت طلب کرنے پر عدالت کا اعتراضات دور ہونے کے بعد درخواست سماعت کیلئے مقرر کرنے کا حکم
شائع 30 مئ 2024 05:28pm

رجسٹردار لاہور ہائیکورٹ نے حکومت پنجاب کی جانب سے پاکستان تحریک انصاف کے بانی چیئرمین عمران خان کے خلاف سنگین کیسز کی منظوری کے خلاف سابق وزیر اعظم کی درخواست پر اعتراضات عائد کردیے۔

لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس فاروق حیدر کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے حکومت پنجاب کی جانب سے سنگین کیسز کی منظوری کے خلاف بانی چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی درخواست پر سماعت کی۔

سماعت کے دوران بانی پی ٹی آئی کے وکیل نے درخواست پر دائراعتراضات ختم کرنے کے لیے مہلت مانگ لی۔

عدالت نے حکم دیا کہ اعتراضات دور ہونے پر درخواست کو سماعت کے لیے مقرر کردیا جائے۔

رجسٹرار آفس لاہور ہائی کورٹ نے درخواست کے ساتھ مصدقہ نقول نہ لگانے کا اعتراض لگایا تھا۔

نیب ترامیم کیس: سپریم کورٹ نے سماعت براہ راست دکھانے کی خیبرپختونخوا کی درخواست مسترد کردی

یاد رہے کہ گزشتہ روز سابق وزیر اعظم عمران خان نے پنجاب حکومت کی جانب سے سنگین کیسز کی منظوری کا اقدام لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج کیا تھا، لطیف کھوسہ کی وساطت سے دائر درخواست میں پنجاب حکومت ، انسپکٹر جنرل (آئی جی) پنجاب ، وزارت داخلہ سمیت دیگر کو فریق بنایا گیا۔

درخواست میں مؤقف اپنایا گیا کہ عمران کان سابق وزیراعظم اور باعزت شہری ہیں، بانی پی ٹی آئی اس وقت مختلف کیسز میں اڈیالہ جیل میں قید ہیں، پنجاب حکومت نے عمران خان سمیت دیگر قیادت پر سنگین مقدمات درج کرنے کی منظوری دی، پنجاب کابینہ کا اقدام آئین کے آرٹیکل 10 کی خلاف ورزی ہے۔

درخواست میں عمران خان نے استدعا کی کہ عدالت پنجاب حکومت کی جانب سے سنگین مقدمات کی منظوری کے اقدام کو کالعدم قرار دے۔

واضح رہے کہ 25 مئی کو وزیراعلیٰ پنجاب مریم نواز کی کابینہ نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے بانی عمران خان سمیت پارٹی کے دیگر رہنماؤں کے خلاف آرمی سمیت دیگر ریاستی اداروں کے خلاف نفرت انگیز مہم چلانے پر مزید مقدمات کی منظوری دے دی تھی۔

صوبائی وزیراطلاعات عظمیٰ بخاری نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ پنجاب کابینہ نے عمران خان سمیت پی ٹی آئی کے دیگر رہنماؤں پر ریاستی اداروں کے خلاف نفرت انگیز مہم میں مبینہ طور پر ملوث ہونے کے الزام میں قانونی کارروائی کی منظوری دی۔

عمران خان نے پنجاب حکومت کی جانب سے سنگین کیسز کی منظوری کا اقدام چیلنج کردیا

انہوں نے کہا کہ عمران خان مسلسل ریاستی اداروں کے خلاف ایک بیانیہ بنارہے ہیں اور وہ مجیب الرحمٰن بننے کی کوشش کررہے ہیں، جب کہ اڈیالہ جیل میں ملاقات کرنے والے رہنما بھی ان کی پیروی کرتے ہیں لہذا پنجاب کابینہ نے ان کے خلاف ایکشن لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

وزیر اعلیٰ پنجاب کی عمران خان اور دیگر کیخلاف قانونی کارروائی کی منظوری

صوبائی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ اس حوالے سے وزارت داخلہ بہت جلد ضروری اقدامات کرے گی۔ عمران خان سمیت پی ٹی آئی رہنماؤں پر مزید مقدمات درج کرنے سے متعلق سوال پر انہوں نے جواب دیا کہ اس حوالے سے صوبائی وزارت داخلہ اقدامات کرے گی۔

imran khan

Lahore High Court

Pakistan Tehreek Insaf (PTI)