Aaj News

بدھ, جولائ 24, 2024  
18 Muharram 1446  

برطانوی ویزے کیلئے پاکستانی بینک اسٹیٹمنٹ نا قابل قبول، حقیقت کیا ہے؟

سوشل میڈیا پر وائرل مراسلہ میں برطانوی ویزا اینڈ امیگریشن کی اسٹیمپ بھی ہے اور بینکوں کے نام بھی
اپ ڈیٹ 15 جون 2024 10:37am

سوشل میڈیا پر ایک مراسلہ گردش کررہا ہے جس میں دعویٰ کیا گیا کہ برطانیہ اب ویزہ یا امیگریشن کی درخواستوں کے لیے بڑے پاکستانی بینکوں سے مالی دستاویزات قبول نہیں کرے گا اور انگریزی زبان کے ٹیسٹ بشمول IELTS کو پاکستانی طلبہ کے لیے ناقابل قبول تصور کیا جائے گا۔ واضح رہے کہ یہ مراسلہ جعلی ہے۔

جعلی مراسلے پر برطانوی ویزا اینڈ امیگریشن کی اسٹیمپ بھی دیکھی جا سکتی ہے۔ مبینہ طور پر یو کے ویزا اینڈ امیگریشن کی جانب سے جاری کیے گئے مراسلے میں دعویٰ کیا گیا کہ کچھ پاکستانی بینکوں کے اسٹیٹمنٹ اب برطانیہ کے ویزا درخواستوں کے لیے قابل قبول نہیں ہوں گے۔

اس جعلی مراسلے میں 9 بڑے بینکوں کے نام بھی درج ہیں۔ اس میں برطانیہ کی طرف سے مبینہ طور پر مسترد کیے گئے انگریزی زبان کے ٹیسٹ بھی درج کیے گئے، بشمول Oxford ELLT Digital، IELTS Life Skills، اور Pearson Test of English۔

اسلام آباد میں برطانوی ہائی کمیشن نے خط کو جھوٹا قرار دیتے ہوئے واضح کیا کہ ایسی کوئی پابندیاں نہیں لگائی گئیں۔

برطانوی ہائی کمیشن نے ایکس اکاؤنٹ پر بتایاکہ اگر آپ کو یہ جعلی مراسلہ ملے تو براہ کرم اسے ڈیلیٹ کردیں، جو پوسٹ کرے اس کو بتائیں کہ یہ جعلی ہے اور اس کو شیئر کرنے سے گریز کریں۔