Aaj News

منگل, جولائ 16, 2024  
10 Muharram 1446  

ایران میں کعبہ کی نقل کا اشتعال انگیز دعویٰ، غیر ملکی خبر ایجنسی فیکٹ چیک پر مجبور ہوگئی

اے پی نے ویڈیو میں بتایا یہ ماڈل ایرانی عازمین حج طواف اور دیگر مناسک کی مشق کیلئے استعمال کرتے ہیں
شائع 20 جون 2024 03:37pm

ایران کے دارالحکومت تہران میں خانہ کعبہ کے ایک بڑے ماڈل کے حوالے سے گمراہ کن ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہے۔

خانہ کعبہ کے اس ماڈل (ریپلیکا) کے ساتھ دیے گئے کیپشن سے یہ تاثر دیتے ہوئے مسلمانوں کے درمیان افتراق و انتشار پیدا کرنے کی کوشش کی گئی کہ ایران میں، نعوذ باللہ، خانہ کعبہ بناکر طواف کیا جارہا ہے۔ حقیقت اس کے بالکل برعکس ہے۔

خانہ کعبہ کے اس ایرانی ماڈل کی تصویریں تین چار سال پہلے بھی وائرل ہوئی تھیں۔ گزشتہ برس 16 مئی کو امریکی خبردار رساں ادارے (اے پی) نے خانہ کعبہ کے اس نمونے کی ویڈیو تیار کی اور اُس کے ساتھ کیپشن بھی لگایا کہ ایران کے عازمینِ حج مناسکِ حج کی تیاریاں اور مشق کر رہے ہیں۔

یہ ویڈیو اے پی کے آفیشل یو ٹیوب چینل پر اپ لوڈ کی گئی تھی اور کسی بھی غلط فہمی یا مغالطے سے بچنے کے لیے اب بھی وہاں دیکھی جاسکتی ہے۔ ویڈیو کے ساتھ دیے گئے کیپشن کا مواد ہر مغالطے کی جڑ کاٹنے کے لیے کافی ہے۔

حقیقت یہی ہے کہ خانہ کعبہ کا یہ ماڈل تہران کے آزادی اسپورٹس ہال میں قائم ہے جہاں عازمینِ حج طواف اور دیگر مناسک کی تیاری اور مشق کرتے ہیں۔

Fact Check

KAABA REPLICA IN TEHRAN

MISLEADING CAPTIONS

PICTURES AND VIDEIOS WENT VIRAL