Aaj TV News

COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 326,216 736
DEATHS 6,715 13

اسلام آباد:حکومت کیخلاف اپوزیشن نے میدان سجا لیا، حکومت کو ٹف ٹائم دینے کیلئے اپوزیشن کی آل پارٹیز کانفرنس کا آغاز ہوگیاجبکہ نواز شریف اور آصف زرداری ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہیں ۔

اپوزیشن نے حکومت کیخلاف جنگ کی تیاری شروع کردی،اسلام آباد میں اپوزیشن کی آل پارٹیز کانفرنس شروع ہوگی،اپوزیشن کی 11جماعتوں کے رہنماءکانفرنس میں شریک ہیں جبکہ پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو اےپی سی کی میزبانی کررہے ہیں۔

اےپی سی میں شرکت کیلئے سیاسی رہنماؤں کی آمد کا سلسلہ جاری ہے،اس سلسلے میں بلاول بھٹو سیاسی قائدین کا استقبال کرنے نجی ہوٹل پہنچ گئے جبکہ یوسف رضا گیلانی،نویدقمر،فرحت اللہ بابر اور نفیسہ شاہ بھی پہنچ گئے۔

اپوزیشن لیڈر شہبازشریف کی قیادت میں ن لیگ کا13رکنی وفدہوٹل پہنچ گیا،شہبازشریف،مریم نواز اورشاہدخاقان ایک ہی گاڑی میں ہوٹل پہنچے جبکہ جے یو آئی ف کے سربراہ مولانافضل الرحمان اور محمودخان اچکزئی بھی پہنچ گئے۔

سابق وزیراعظم نواز شریف لندن سے اور سابق صدر آصف زرداری کراچی سے ویڈیو لنک سے اجتماع کا حصہ ہوں گے، اس کے علاوہ مسلم لیگ ن کے صدر شہبازشریف اورنائب صدر مریم نوازنےبھی اے پی سی میں شرکت کی حامی بھرلی ۔

اس کے علاوہ جے یو آئی ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان، بی این پی کے سربراہ اختر مینگل، آفتاب شیر پاؤ سمیت دیگر رہنماؤں کو دعوت نامے پہنچا دیئے گئے ۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ کانفرنس کا ایجنڈا 2نکاتی ہوگا ،جس میں حکومت کی2 سالہ کارکردگی کا جائزہ لیا جائے گا،آئندہ کی حکمت عملی پر بھی مشاورت ہوگی اورحکومت کو گھر بھیجنے کیلئے منصوبہ بندی کی جائے گی۔

بلاول بھٹو زرداری نے گزشتہ روزجے یو آئی ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کی اور انہیں اے پی سی میں شرکت کی دعوت دی۔

ملاقات میں جے یو پی کے رہنماء شاہ اویس نورانی،مرکزی جماعت اہلحدیث کے رہنماءسینیٹرعبدالکریم ،سابق وزرائے اعظم یوسف رضاگیلانی،راجہ پرویزاشرف اوردیگرشامل تھے۔

ادھر بلاول بھٹو کی زیر صدارت پیپلز پارٹی کے مشاورتی اجلاس ہوا،ذرائع کے مطابق اجلاس میں فیصلہ کیاگیا ہے کہ پیپلز پارٹی اے پی سی میں وزیراعظم، اسپیکر قومی اسمبلی اور وزیراعلی پنجاب کیخلاف عدم اعتماد کی تحریک لانے کی تجویز دے گی۔