Aaj TV News

BR100 4,585 Decreased By ▼ -11 (-0.25%)
BR30 17,412 Decreased By ▼ -370 (-2.08%)
KSE100 44,924 Decreased By ▼ -94 (-0.21%)
KSE30 17,727 Decreased By ▼ -21 (-0.12%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,374,800 7,195
DEATHS 29,105 8
Sindh 526,899 Cases
Punjab 464,431 Cases
Balochistan 33,941 Cases
Islamabad 118,292 Cases
KP 185,340 Cases

سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حلیم عادل شیخ نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی کی حکومت نے سندھ میں تعلیم کو تباہ کردیا ہے۔10ہزار اسکول بند ہیں۔ حیدرآباد میں پبلک اسکول کی تباہی کی ذمہ دار بھی پیپلز پارٹی کی حکومت ہے۔

حیدرآبادکےپبلک اسکول میں میڈیاسےگفتگو کرتےہوئے حلیم عادل شیخ کا کہنا تھا کہ تعلیمی اداروں میں فیسوں میں اضافہ کردیا گیا ہے اور سرکاری اسکول نجی تحویل میں دیے جارہے ہیں جس میں مزدور اور ڈرائیور کا بچہ نہیں پڑھ سکتا13سال میں سندھ میں تعلیم پر 146ارب روپے خرچ کئے گئے۔اب سندھ میں10ہزار اسکول بند کئے جارہے ہیں۔ ان اسکول میں یا تو وڈیروں کی اوطاقیں کھلیں گی یا مویشیوں کے باڑے۔

انہوں نے مزید کہااسکولوں کے لئے ساڑھے پانچ ہزار روپے کی ڈیسک کو 29 ہزار روپے میں خریدنے کے اسکینڈل کا سب سے بڑا کردار جو پرچیزنگ کمیٹی کا سربراہ بھی تھا میر محمد شاہ وہی آ ئی بی اے کا سربراہ ہے۔ اس سے بڑا بےایمان کوئی نہیں ہوسکتا۔

انہوں نے کہا کہ پبلک اسکول کی قیمتی زمین کو بیچنے کی کوشش کی جارہی ہے اور اس میں بڑے گدھ شامل ہیں۔