Aaj News

بدھ, اپريل 24, 2024  
16 Shawwal 1445  

پی ٹی آئی نے سنی اتحاد کونسل سے اتحاد کا اعلان کردیا

پریس کانفرنس میں تینوں جماعتوں کے رہنماؤں کی شرکت
اپ ڈیٹ 19 فروری 2024 08:21pm
اسکرین گریب
اسکرین گریب

پی ٹی آئی نے اسلام آباد میں ایک پریس کانفرنس کے دوران سنی اتحاد کونسل کے اساتھ اتحاد کا اعلان کردیا۔

پی ٹی آئی کے بیرسٹر گوہر، عمر ایوب اور حسن روف نے مجلس وحدت المسلمین کے رہنما راجہ ناصر عباس اور سنی اتحاد کونسل کے رہنما حامد رضا کے ساتھ پریس کانفرنس کی۔

پریس کانفرس کے آغاز پر بیرسٹر گوہر نے ایک بار پھر دعویٰ کیا کہ پی ٹی آئی قومی اسمبلی کی 180 نشستوں پر جیت چکی ہے۔ انہوں نے اعلان کیا کہ قومی، پنجاب اور خیبرپختونخوا اسمبلی میں تحریک انصاف کے حمایت یافتہ اراکین سنی اتحادکونسل میں شامل ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے امیدوار اپنے حلف نامے کل ہمارے پاس جمع کرا چکے ہیں۔

عمرایوب نے کہاکہ پی ٹی آئی کی پہلی کوشش عمران خان اور بشریٰ بی بی کی رہائی ہوگی۔

پریس کانفرنس کے دوران مجلس وحدت المسلمین (ایم ڈبلیو ایم ) کے علامہ راجہ ناصر عباس بھی موجود تھے لیکن اتحاد کا اعلان صرف سنی اتحاد کونسل کے ساتھ کیا گیا۔ واضح رہے کہ پی ٹی آئی نے الیکشن کے فوری بعد ایم ڈبلیو ایم کے ساتھ اتحاد کا اعلان کیا تھا تاہم یہ فیصلہ تبدیل کردیا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ مخصوص نشستوں کے لیے بھی ہمارامعاہدہ ہوا ہے۔ الیکشن کمیشن سےدرخواست کریں گے کہ ہمیں مخصوص نشستیں الاٹ کی جائیں۔

انہوں نے کہا کہ سخت حالات میں ہم نے ایک دوسرے کوکندھا دینا ہے اور ہمارا اتحاد اس ملک کے لیے ہے۔

پرہس کانفرنس کے آغاز میں چیئرمین سنی اتحاد کونسل صاحبزادہ حامد رضا اور چیئرمین مجلس وحدت مسلمین علامہ راجہ ناصر کوخوش آمدید کہتے ہوئے بیرسٹر گوہر کا کہنا تھا کہ ہمارےامیدواروں نےآزاد حیثیت سے الیکشن لڑا،ہمارا مؤقف ہےآزادحیثیت سے کامیاب امیدواروں کا تعلق پی ٹی آئی سے ہے۔

سیکرٹری جنرل پی ٹی آئی عمر ایوب نے کہا کہ ملک میں فرقہ واریت نہیں چاہتے، پی ٹی آئی حمایت یافتہ سنی اتحاد کونسل میں شریک ہوں گے۔ ہم چاہتے ہیں کہ پوری قوم متحد ہو۔

عمر ایوب نے کہا کہ راولپنڈی کمشنرکے بیان سے پتہ چلاکس طرح دھاندلی ہوئی۔ لیاقت چٹھہ نے ساراپول کھولتے ہوئے بتا دیا کہ الیکشن والےدھاندلی ہوئی۔ پشاورکی 7کے قریب سیٹوں پربھی دھاندلی کی گئی۔

عمرایوب نے کہاکہ ’مجلس وحدت المسلمین نے عمران خان اور پاکستان تحریک انصاف کے لیے جتنی سپورٹ کی ہے میرے پاس الفاظ نہیں ہیں۔ ہر جگہ پر علامہ صاحب کہتے ہیں کہ انسان کے پاس ایک سٹریٹجک تھنکنگ ہونی چاہئیے۔ یہاں پر میںپاکستان تحریک انصاف کے ہر ایک ورکر کی طرف سے علامہ صاحب آپ کا آپ کی ٹیم کا تہہ دل سے مشکور ہوں کہ جو آپ کی سوچ ہے پاکستان کے لیے اسلام کے لیے۔ ہم لوگ آپ کے تہہ دل سے شکرگزار ہیں کہ ہمیشہ آپ نے عمران خان کی اور پی ٹی آئی کی حمایت کی ہے۔‘

چیئرمین سنی اتحاد کونسل صاحبزادہ حامد رضا نے کہا کہ پی ٹی آئی سے ہمارا ساتھ آج سے نہیں ہے،7 سے 8 سال سے ہے۔

انھوں نے کہا کہ ہم روا داری کے قائل ہیں، ہمارا پی ٹی آئی کے ساتھ اتحاد غیرمشروط ہے۔ آج نئے پاکستان کی حقیقی تخلیق آپکے سامنے ہے۔

حامد رضا نے مزید کہا کہ پالیسی پی ٹی آئی اور بانی پی ٹی آئی کی ہوگی۔ ہماری مشاورت اور بانی پی ٹی آئی سے اپروول کے بعد فیصلہ ہوا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پالیسی تحریک انصاف کی ہی ہو گی جس پر معاہدہ بھی سائن ہو چکا ہے، مشکل وقت میں بھائی کا دست بازو بنتے ہیں۔

چیئرمین سنی اتحاد کونسل نے مزید کہا کہ الیکشن سے چند روز قبل تحریک انصاف سے بلے کا نشان واپس لے لیا گیا، ملک میں انتشار پھیلانے والی سب سے بڑی جماعت مسلم لیگ ن ہے، گزشتہ 72 گھنٹوں میں انتشار کی کوشش کرنے والے کا ماسٹر مائنڈ رانا ثناء اللہ ہے۔

علامہ راجہ ناصر نے کہا کہ ہم پی ٹی آئی پر بوجھ نہیں بنیں گے، فرقہ واریت پھیلانے والے نہیں ہیں۔ پی ٹی آئی سے ہمارا ساتھ آج سے نہیں ہے،7 سے 8 سال سے ہے۔ ہم رواداری کے قائل ہیں اور یہ اتحاد غیرمشروط ہے۔

انہوں نے واضح کیا کہ پالیسی پی ٹی آئی اور بانی پی ٹی آئی کی ہوگی، پی ٹی آئی کارکنان اورلیڈرشپ نےصبرکی تاریخ رقم کی، عالمی ایجنڈے کے تحت حکومت کوگرا کر ظلم کی انتہا کی گئی اور سب نے دیکھاکہ کس طرح عالمی ایجنڈے کے تحت سازش کی گئی۔

انہوں نے کہا کہ عوام نے جنہیں مستردکیا انہیں ہم پر مسلط کیاجارہا ہے، الیکشن غیرآئینی اورغیرقانونی طورپرکرائے گئے جب الیکشن قریب آئے تولیڈرشپ،ورکرزکواٹھاکرجیلوں میں ڈال دیا گیا، 8فروری کی رات دھاندلی کی رات تھی اور د ھاندلی کرنےوالوں سےآج نہیں تو کل پوچھا جائے گا۔

پی ٹی آئی کے پی کے ممبران اسمبلی اسپیکر ہاؤس طلب

سیاسی اتحاد کے بعد پی ٹی آئی سے تعلق رکھنے والے مںتخب ممبران اسمبلی کو سنی اتحاد کونسل کے فارم فل کرنے کی ہدایت کی گئی۔

نومنتخب ایم پی اے ظاہر شاہ طورو نے کہا کہ ہمیں پہلے ہی پشاور میں رہنے کی ہدایت کی گئی تھی، پارٹی کا جو حکم ہوگا اس کو فالو کریں گے۔

انھوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن میں مخصوص نشستوں کے لئے فہرست جمع کرادی جائے گی۔

pti

Barrister Gohar

PTI MWM Coalition

Sunni Ittehad Council

Comments are closed on this story.

تبصرے

تبولا

Taboola ads will show in this div