Aaj News

پیر, مئ 27, 2024  
18 Dhul-Qadah 1445  

امریکا نے حملے سے قبل مطلع کیے جانے کا ایرانی دعویٰ مسترد کردیا

عراق، شام اور ترکیہ کے اعلیٰ حکام نے پہلے سے مطلع کیے جانے کی تصدیق کردی
شائع 15 اپريل 2024 09:10am

امریکا نے کہا ہے کہ اسرائیل پر حملے کی پہلے سے اطلاع دینے کا ایران کا دعویٰ بے بنیاد ہے۔ ایرانی وزیرِ خارجہ امیر حسین عبداللہیان نے گزشتہ روز کہا تھا کہ ایران نے اسرائیل پر میزائل اور ڈرون حملے سے 72 گھنٹے قبل امریکی قیادت کو مطلع کردیا تھا۔

امریکا کا کہنا ہے کہ ایران نے حملہ کرنے کے بعد مطلع کیا۔ ترکیہ، عراق اور شام نے بتایا ہے کہ ایران نے اسرائیل پر جوابی حملے کے بارے میں پہلے سے مطلع کردیا تھا۔

ایران کے حملے سے مشرقِ وسطیٰ کی صورتِ حال ایک بار پھر انتہائی نازک موڑ پر آگئی ہے اور کسی بھی وقت کوئی بڑی جنگ چھڑ سکتی ہے۔ عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمتیں بڑھ گئی ہیں۔ خطے کی اسٹاک مارکیٹ پر بھی ایرانی حملے کا شدید منفی اثر مرتب ہوا ہے۔

اسرائیلی فوج کا کہنا ہے کہ ایرانی حملے کے بعد تمام یونٹ انتہائی چوکس حالت میں ہیں اور کسی بھی صورتِ حال سے موثر طور پر نمٹنے کے تمام ہنگامی منصوبے تیار ہیں۔ اسرائیل بھر میں ہنگامی حالت نافذ ہے۔ حکومت نے لوگوں سے کہا ہے کہ غیر ضروری طور پر گھروں سے نہ نکلیں اور خطرے کی صورت میں سائرن بجنے پر بنکرز میں چلے جائیں۔

اسرائیل کے بیشتر شہروں میں لوگوں نے بڑے پیمانے پر خوراک اور پانی ذخیرہ کرلیا ہے۔ اسکول بند ہیں اور دفاتر میں بھی برائے نام حاضری ہے۔ حکومت نے اسرائیلی یرغمالیوں کے متعلقین و احتجاج کرنے سے بھی روک دیا ہے۔

Iran attack Israel

US DENIAL

IRAN CLAIMS INFORMED BEFORE ATTACK

IRAQ SYRIA AND TURKIYEH WERE INFORMED