Aaj TV News

COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 255,769 2165
DEATHS 5,386 66
Sindh 107,773 Cases
Punjab 88,045 Cases
Balochistan 11,239 Cases
Islamabad 14,315 Cases
KP 31,001 Cases

اسلام آباد:سپریم کورٹ نے ڈینیل پرل قتل کیس کے ملزمان کی بریت کا فیصلہ معطل کرنے کی استدعا مسترد کردی۔

جسٹس مشیرعالم کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3رکنی بینچ نے ڈینیل پرل قتل کیس کی سماعت کی ۔

وکیل سندھ حکومت نے مؤقف اپنایا کہ ملزمان بین الااقوامی دہشتگرد ہے جنہیں ایم پی او کے تحت رکھا گیا۔

جسٹس یحییٰ آفریدی نے ملزمان کو دہشتگرد کہنے پر اعتراض کیا تو وکیل نے بتایاکہ ایک ملزم بھارت اوردوسرا افغانستان میں دہشتگرد تنظیم کے ساتھ کام کرتا رہا ،ملزمان آزاد ہونے کے سنگین اثرات ہوسکتے ۔

جسٹس یحیٰ آفریدی نے ریمارکس دیئے کہ یاد رکھیں ملزمان کوایک عدالت نے بری کیا ہے جس پر ملزمان کے وکیل نے بتایاکہ ملزمان نے 18 سال سے سورج نہیں دیکھا ۔

جسٹس مشیرعالم نے ریمارکس دیئے کہ ملزمان کی بریت کے حکم کو ٹھوس وجہ کے بغیرکیسے معطل کیا جا سکتا، فیصلے میں کوئی سقم ہوتب ہی معطل ہوسکتا ہے حکومت چاہے توایم پی او میں توسیع کرسکتی ہے ۔

بعدازاں عدالت عظمیٰ نے ڈینیل پرل قتل کیس کی مزیدسماعت ستمبرکیلئے ملتوی کردی۔