Aaj TV News

BR100 4,445 Increased By ▲ 25 (0.56%)
BR30 22,731 Increased By ▲ 119 (0.53%)
KSE100 42,505 Increased By ▲ 170 (0.4%)
KSE30 18,046 Increased By ▲ 102 (0.57%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 288,047 747
DEATHS 6,162 9

کراچی: عالمی و مقامی سطح پر سونے کی قیمت میں مسلسل تیسرے روز اضافہ، 24 قیراط سونے کی قیمت میں 300 روپے کا مزید اضافہ ہوا ہے جس کے بعد فی تولہ سونا ایک لاکھ 15 ہزار روپے کا ہوگیا ہے۔

فی تولہ سونے کی قیمت میں 300 روپے جبکہ 10 گرام سونے کی قیمت میں 257 روپے کا اضافہ ہوا ہے۔

ایک تولہ سونا ایک لاکھ 15 ہزار روپے جبکہ 10 گرام سونا 98 ہزار 594 روپے کا ہوگیا ہے۔

عالمی منڈی میں سونا 2 ڈالرز کے اضافے سے 1965 ڈالرز فی اونس کی سطح پر پہنچ گیا ہے۔

آل سندھ صراف جیولرز ایسوسی ایشن کے مطابق آج سونے کی قیمت دبئی کے مقابلے 9 ہزار روپے کم ہے۔

اس کے علاوہ فی تولہ اور 10 گرام چاندی کی قیمت بناء کسی اضافے کے بالترتیب 1320 اور 1132 روپے کی سطح پر مستحکم رہی ہے۔

15 ستمبر 2020 کے ریٹ

سونے کی قیمت میں 300 روپے کا مزید اضافہ ہوا تھا جس کے بعد فی تولہ سونا ایک لاکھ 14 ہزار 700 روپے کا ہوگیا تھا۔

فی تولہ سونے کی قیمت میں 300 روپے جبکہ 10 گرام سونے کی قیمت میں 257 روپے کا اضافہ ہوا تھا۔

ایک تولہ سونا ایک لاکھ 14 ہزار 700 روپے جبکہ 10 گرام سونا 98 ہزار 337 روپے کا ہوگیا تھا۔

عالمی منڈی میں سونا 15 ڈالرز کے اضافے سے 1963 ڈالرز فی اونس کی سطح پر پہنچ گیا تھا۔

آل سندھ صراف جیولرز ایسوسی ایشن کے مطابق سونے کی قیمت دبئی کے مقابلے 9 ہزار روپے کم تھی۔

اس کے علاوہ فی تولہ اور 10 گرام چاندی کی قیمت بناء کسی اضافے کے بالترتیب 1320 اور 1132 روپے کی سطح پر مستحکم رہی تھی۔

14 ستمبر 2020 کے ریٹ

سونے کی قیمت میں 400 روپے کا اضافہ ہوا تھا جس کے بعد فی تولہ سونا ایک لاکھ 14 ہزار 400 روپے کا ہوگیا تھا۔

فی تولہ سونے کی قیمت میں 400 روپے جبکہ 10 گرام سونے کی قیمت میں 343 روپے کا اضافہ ہوا تھا۔

ایک تولہ سونا ایک لاکھ 14 ہزار 400 روپے جبکہ 10 گرام سونا 98 ہزار 080 روپے کا ہوگیا تھا۔

عالمی منڈی میں سونا 8 ڈالرز کے اضافے سے 1948 ڈالرز فی اونس کا ہوگیا تھا۔

آل سندھ صراف جیولرز ایسوسی ایشن کے مطابق سونے کی قیمت دبئی کے مقابلے 9 ہزار روپے کم تھی۔

اس کے علاوہ فی تولہ اور 10 گرام چاندی کی قیمت بناء کسی اضافے کے بالترتیب 1320 اور 1132 روپے کی سطح پر مستحکم رہی تھی۔