Aaj TV News

COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 325,480 736
DEATHS 6,702 10

کافی عرصہ پہلے بالی وڈ سپر اسٹار متھن چکرورتی کے بیٹے کے خلاف ایک ساتھی اداکارہ نے ریپ کا الزام لگایا تھا مگر ایف آئی آر درج ہونے میں دو سال سے زائد کا عرصہ لگ گیا۔

بھارت میں عدالت کے حکم پر دو سال بعد معروف اداکار متھن چکروتی کے بیٹے مہاکشے کے خلاف ساتھی اداکارہ کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے پر ایف آئی آر درج کر لی گئی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق 38 سالہ خاتون نے اوشیوارا تھانے میں اداکار متھن چکروتی کی اہلیہ یوگیتا بالی اور بیٹے مہاکشے کے خلاف ایف آئی آر درج کرائی جس میں شادی کا جھانسہ دے کر جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے، دھوکہ دہی اور اسقاط حمل کے لیے دباﺅ ڈالنے کے الزامات عائد کیے گئے ہیں۔

ایف آئی آر میں متھن چکروتی کی اہلیہ یوگیتا بالی کو بھی نامزد کیا گیا ہے، متاثرہ خاتون کا کہنا ہے کہ یوگیتا بالی کو ہمارے تعلقات کا بھی پتہ تھا اور انہوں نے بھی اسقاط حمل کے لیے مجھ پر دباؤ ڈالا تھا اور دھمکیاں دی تھیں۔

ایف آئی آر کے متن کے مطابق مہاکشے اور متاثرہ خاتون کے درمیان 2015 سے تعلقات تھے اور مہاکشے چکروتی نے نشے آور چیز پلا کر زیادتی کا نشانہ بنایا اور بعد ازاں شادی سے انکار کردیا۔

متاثرہ خاتون کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی تاہم کہا جاتا ہے کہ وہ بھوج پوری اداکارہ ہیں۔ مہاکشے چکروتی پر جنسی زیادتی کا مقدمہ درج کرانے کے لیے کئی بار کوششیں کیں لیکن ہر بار متھن چکروتی کے تعلقات کام آئے جس کے بعد مذکورہ خاتون نے دہلی کی مقامی عدالت سے رجوع کیا۔ عدالت کے حکم کے باوجود تھانے میں ایف آئی آر درج کرنے میں دو ماہ کا عرصہ لگ گیا

واضح رہے کہ مہاکشے چکروتی کی شادی 8 جولائی 2018 کو مدالسا شرما کے ساتھ ہو رہی تھی کہ متاثرہ خاتون کی درخواست پر عدالت نے پولیس کو کارروائی کا حکم دیا، پولیس چھاپے کی وجہ سے شادی کو منسوخ کردیا گیا تھا جو دو دن بعد ہوئی تاہم متاثرہ خاتون کو دھمکیوں کی وجہ سے نئی دہلی منتقل ہونا پڑا تھا۔ مگر اب اس خاتون کی ایف آئی آر ملزم کے خلاف درج ہو گئی ہے اور وہ پرامید ہیں کہ انہیں انصاف ضرور ملے گا۔