Aaj TV News

BR100 4,820 Decreased By ▼ -32 (-0.66%)
BR30 25,669 Decreased By ▼ -3 (-0.01%)
KSE100 44,978 Decreased By ▼ -208 (-0.46%)
KSE30 18,443 Decreased By ▼ -42 (-0.23%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 725,602 4584
DEATHS 15,501 58
Sindh 269,126 Cases
Punjab 250,459 Cases
Balochistan 20,321 Cases
Islamabad 66,380 Cases
KP 99,595 Cases

اسلام آباد:سپریم کورٹ نے جسٹس قاضی فائزعیسیٰ نظرثانی کیس میں بینچ کی تشکیل کا فیصلہ سنا دیا ، عدالت نے درخواستیں نمٹاتے ہوئے معاملہ چیف جسٹس کو بھجوا دیا جبکہ 6رکی بینچ کا فیصلہ پانچ ایک کی نسبت سے آیا ۔

سپریم کورٹ نے 6رکنی لارجر بینچ کے بجائے فل کورٹ تشکیل دینے کی درخواستوں پرفیصلہ سنا دیا ،جسٹس عمرعطا ءبندیال کی سربراہی میں 6رکنی لارجر بینچ نے درخوستوں پرمحفوظ شدہ فیصلہ سنایا۔

جسٹس عمر عطا ءبندیال نے محفوظ شدہ مختصر فیصلہ سناتے ہوئے معاملہ چیف جسٹس آف پاکستان گلزار احمد کو بھجوا دیا۔

عدالت نے درخواستیں نمٹاتے ہوئے فیصلےمیں کہاکہ بینچ تشکیل دینے کا اختیار چیف جسٹس آف پاکستان کے پاس ہے، چیف جسٹس چاہیں تو نظرثانی درخواستوں پر لارجر بینچ بھی بنا سکتے ہیں، عام طور پر فیصلہ دینے والا بینچ ہی نظرثانی درخواستیں سنتا ہے۔

فیصلے میں مزیدکہا گیا کہ نظرثانی بینچ میں فیصلہ تحریر کرنے والا جج لازمی شامل ہوتا ہے، جج دستیاب نہ ہو تو حکم نامے سے اتفاق کرنے والا جج بینچ کا حصہ ہوتا ہے۔

سپریم کورٹ نے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کیس میں محفوظ شدہ فیصلہ 5 ایک کی نسبت سے سنایا۔

6رکنی لارجر بینچ میں شامل جسٹس منظوراحمدملک نےفیصلےسےاختلاف کیا،جسٹس منظوراحمد ملک اختلافی نوٹ لکھیں گے ۔

یاد رہے کہ سپریم کورٹ نے 10دسمبر کو جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نظرثانی کیس کا فیصلہ محفوظ کیا تھا،نظر ثانی درخواستوں میں 6رکنی لارجر بینچ کے بجائے فل کورٹ تشکیل دینے کی استدعا کی گئی تھی۔

سپریم کورٹ نے جسٹس قاضی فائزعیسیٰ نظرثانی درخواستیں نمٹاتے ہوئے معاملہ چیف جسٹس کو بھجوا دیا