Aaj TV News

BR100 4,607 Decreased By ▼ -61 (-1.3%)
BR30 20,274 Decreased By ▼ -618 (-2.96%)
KSE100 44,629 Decreased By ▼ -192 (-0.43%)
KSE30 17,456 Decreased By ▼ -66 (-0.38%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,265,650 603
DEATHS 28,300 20
Sindh 466,154 Cases
Punjab 438,133 Cases
Balochistan 33,133 Cases
Islamabad 106,504 Cases
KP 176,950 Cases

امریکا،جاپان، آسٹریلیا اور بھارت کے بحری بیڑوں نے خلیج بنگال میں مشترکہ بحری مشقوں کا آغاز کر دیا ہے۔

جاپان کی کویوڈو خبر رساں ایجنسی نے جاپان بحری سیلف ڈیفنس فورسز MSDF کے حوالے سے شائع کردہ خبر میں کہا ہے کہ 4 ممالک کے قائم کردہ 'کواڈ اتحاد' نے "مالابار 2021" مشقوں کا آغاز کر دیا ہے۔

MSDF کے مطابق مشقوں میں امریکی بحری بیڑے کا جوہری پاور سے چلنے والا ایئر کرافٹ کیرئیر 'کارل ونسن'، آسٹریا کا ایک فریگیٹ، بھارت کا ڈسٹرائر اور جاپان کے دو بحری جہاز شامل ہیں۔

جاپان کابینہ کےڈپٹی ہیڈ سیکریٹری کیہارا سیجی نے منعقدہ پریس کانفرنس میں کہا کہ ہم امید کرتے ہیں کہ یہ مشقیں "آزاد اور کھُلے انڈو۔پیسیفک " ویژن کو عملی جامہ پہنانے کےلئے چاروں ممالک کے باہمی تعلقات کو مضبوط بنائیں گے۔

بحرِ ہند کے شمال مشرق میں خلیج بنگال میں جاری مالابار مشقیں کل اختتام پذیر ہو جائیں گی۔ان مشقوں کو انڈو پیسیفک علاقے میں چین کی بڑھتی ہوئی کاروائیوں کے خلاف ایک قدم کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔

واضح رہے کہ پہلی مالابار مشقیں بھارت اور امریکا کے بحری بیڑوں کی شرکت سے 1992 میں کی گئیں اور 2015 میں جاپان بھی ان مشقوں میں شامل ہو گیا۔