Aaj.tv Logo

پشاور: خیبر پختونخوا میں خواجہ سراوں پر قاتلانہ حملوں کے واقعات میں اضافے کا سلسلہ جاری ہے۔

غیر سرکاری تنظیم کے پروگرام منیجر کے مطابق گذشتہ برس سے اب تک 9 خواجہ سراء قتل اور تشدد کے واقعات میں 700 سے زائد زخمی ہوچکے ہیں جبکہ زیادہ تر خواجہ سراوں کے قتل رقم کے تنازعے پر ہوئے ہیں۔

اس ضمن میں اے آئی جی صنفی مساوات عائشہ گل کا کہنا ہے کہ ٹرانسجنڈرز کے قتل کے زیادہ تر واقعات میں راضی نامہ کرلیا جاتا ہے جس کی وجہ سے ملزمان سزا سے بچ جاتے ہیں۔