Aaj News

پیر, مارچ 04, 2024  
23 Shaban 1445  

عمران خان کی دونوں بہنوں سے متعلق بشریٰ بی بی اور لطیف کھوسہ کی مبینہ آڈیو لیک

شرم آنی چاہیے جس نے ذاتی گفتگو لیک کی، یہ کلائنٹ اور وکیل کے درمیان گفتگو ہے، لطیف کھوسہ کا ردعمل
اپ ڈیٹ 30 نومبر 2023 03:18pm
فوٹو — اسکرین گریب
فوٹو — اسکرین گریب

سابق وزیراعظم اور چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کی دونوں ہمشیراؤں اور اہلیہ بشریٰ بی بی کے درمیان اختلافات سے متعلق مبینہ آڈیو سامنے آگئی۔

عظمیٰ اور علیمہ خان کے ساتھ اختلافات سے متعلق چیئرمین پی ٹی آئی کے وکیل لطیف کھوسہ اوربشریٰ بی بی کی مبینہ آڈیو سامنے آئی جس میں اس حوالے سے کھل کراظہارکیا جا رہا ہے۔

آڈیو میں بشریٰ بی بی کو کہتے سنا جا سکتا ہے کہ ’وہاں پر ہمارا مسئلہ پڑ گیا تھا کیونکہ ان کی بہنیں بھی ساتھ تھیں بلکہ ہماری تو اچھی خاصی ہو گئی تھی‘۔ جس پر لطیف کھوسہ کو ’اچھا اچھا‘ کہتے سنا گیا۔

بشریٰ بی بی کا مبینہ آڈیو میں کہنا ہے کہ ، ’وہاں کافی ایشو کھڑا ہوگیا تھا تو میں نے زیادہ مناسب نہیں سمجھا کہ میں ان لوگوں سے زیادہ بہنوں سے بات کروں، بس میں نے خان صاحب کو کہہ دیا کہ میرے تو سارے کیسز وہی کریں گے اور آپ کے جتنے اب ہوں گے جو میں نہیں سمجھوں گی کہ اب یہ لیٹ ہو رہا ہے تو میں انہی کو دوں گی‘۔

لطیف کھوسہ بشریٰ بی بی سے کہتے ہیں ’چلیں، بہر کیف وہ کہتی ہیں کہ میرے ساتھ اس نے بدتمیزی کی ہے، اصل میں ہوا یوں‘۔

اسی دوران بشریٰ بی بی لطیف کھوسہ کی بات کاٹ کر کہتی ہیں، ’انہوں نے کہا اُس نے ہمارے ساتھ اتنی بدتمیزی کی ہے کہ ہم سوچ بھی نہیں سکتے تھے کہ کسی کی اتنی ہمت ہو تو میں نے آگے سے یہ کہا ان کو کیا ضرورت تھی کہ یہ تینوں اٹھ کر آفس چلی جائیں؟‘

بشریٰ بی بی نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہا کہ، ’یہ کون ہوتی ہیں پوچھنے والی؟ کہتی ہیں ہم پوچھنے گئیں تھیں کہ آپ نے زہر والی لائن کیوں لکھی ہے؟ وہ جس طریقے سے بول رہی تھیں میں نے کہا آپ اس طریقے سے مت بولیں، وہ بہت زیادہ بولیں تو میں نے خان صاحب سے کہا نہیں بس میرے وکیل وہی ہیں، تو پھر میں اٹھ کر آ گئی‘۔

اس پر لطیف کھوسہ نے جواب میں کہا کہ ’بہرکیف پتہ نہیں ان کو کیا مسئلہ ہے‘۔

اس پر بشریٰ بی بی نے ایک بار پھر لطیف کھوسہ کی بات کاٹتے ہوئے کہا کہ ’وہ کہتی ہیں ہم نے جانا نہیں تھا، کھوسہ صاحب کی اہلیہ نے کہا تم لوگ جاکر ملو، میں نے کہا ان کی آپس میں لڑائیاں شروع ہو جائیں گی، پھر میں خاموش ہو گئی‘۔

سردار لطیف کھوسہ بولے، ’میں بدتمیزی کرنے والا ہوں ہی نہیں، میں نے یہ ضرور کہا کہ دیکھیں بار بار آپ ضد مت کریں، جس طرح سے میں مناسب سمجھتا ہوں مجھے کرنے دیں، اسی بات پر انہوں نے کہا کہ جی بدتمیزی کی ہے، میں نے کیا بدتمیزی کرنی تھی‘۔

یہ بھی پڑھیں:

ایک اِن اور ایک آؤٹ، والیوم 10 کہاں گیا، سیاسی رہنماؤں کی بحث

تحریک انصاف کے نئے نامزد کردہ نگران چیئرمین کون ہیں؟

مبینہ آڈیو میں بشریٰ بی بی یہ بھی کہتے سنا جا سکتا ہے کہ ’نہیں جی اب میں آپ کو بتاتی ہوں انہوں نے یہ نہیں کہا کہ وہ اس پٹیشن کے لیے گئی تھیں، وہ کہتی ہیں یہ تو ہے ہی جھوٹ۔۔۔ ہم تو ان سے ویسے ہی ملنے کے لیے گئے تھے، ہاں آگے ان کا رویہ، انہوں نے خان ۔۔۔۔ خان کوکہتی ہیں انہوں نےتہمارے حوالے سے،، سائفر کے حوالے سے، تمھارے حوالے سے 9 مئی کے حوالے سے اتنا برا بولا‘۔

شرم آنی چاہیے جس نے ذاتی گفتگو لیک کی، یہ کلائنٹ اور وکیل کے درمیان گفتگو ہے، لطیف کھوسہ

دوسری جانب عمران خان کے وکیل سردار لطیف کھوسہ نے آڈیو لیک کی غیر اعلانیہ تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ شرم آنی چاہیے جس نے ذاتی گفتگو لیک کی، یہ کلائنٹ اور وکیل کے درمیان گفتگو ہے، جسٹس بابر ستار نے آرڈر دیا ہے کہ یہ کون آڈیو لیک کر رہا ہے۔

واضح رہے کہ بشریٰ بی بی نے 10 اکتوبر 2023 کو اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائرکی جانے والی درخواست میں موقف اپنایا تھا کہ ان کے شوہر کو تحفظ فراہم کیا جائے، چیئرمین پی ٹی آئی کو زہر دیا جاسکتا ہے۔

بشریٰ بی بی نے چیئرمین پی ٹی آئی کو جیل میں سیکیورٹی فراہم کرنے سے متع؛ق درخواست جلد سماعت کے لیے مقرر کرنے کی استدعا کرتے ہوئے کہا تھا کہ، ’عمران خان کو گھر کا کھانا فراہم کرنے کی اجازت نہیں دی جا رہی، خدشہ ہے کہ میرے شوہر کو جیل میں زہردیاجا سکتا ہے‘۔

اس سے قبل 11 اگست کو بھی چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کے وکیل نعیم پنجوتھا نے ایکس پراپنی پوسٹ میں دعویٰ کیا تھا کہ عدالت کو بتایا ہے کہ پی ٹی آئی چیئرمین کی فیملی کو خدشہ ہے کہ جیل میں اُنہیں زہر دیا جا سکتا ہے۔

pti

imran khan

bushra bibi

audio leak

pti chairman

latif khosa

Uzma Khan

Comments are closed on this story.

تبصرے

تبولا

Taboola ads will show in this div