Aaj News

جمعہ, اپريل 19, 2024  
10 Shawwal 1445  

احتجاج اور توڑ پھوڑ کیس: عمران خان، اسد عمر اور فیصل جاوید سمیت دیگر بری

مقدمہ میں ملزمان کو سزا نہیں سنائی جاسکتی، ٹرائل وقت کا ضیاع ہے، عدالت
شائع 28 فروری 2024 10:33am

اسلام آباد کی مقامی عدالت نے احتجاج اور توڑ پھوڑ کے مقدمے میں پاکستان تحریک انصاف کے سابق چیئرمین عمران خان، اسد عمر اور سینیٹر فیصل جاوید سمیت دیگر کو بری کر دیا۔

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ اسلام آباد کے جوڈیشل مجسٹریٹ محمد شبیر نے تھانہ ترنول میں احتجاج اور توڑ پھوڑ کرنے سے متعلق درج مقدمے میں عمران خان سیمت دیگر ملزمان کی بریت کی درخواستیں منظور کرنے کا فیصلہ جاری کردیا۔

دوران سماعت وکلاء میں آمنہ علی، سردار مصروف خان اور محسن غفار عدالت میں پیش ہوئے۔

عدالت نے سابق وزیراعظم عمران خان، اسدعمر، فیصل جاوید اور دیگر کو مقدمہ سے بری کر دیا گیا۔

عدالت کی جانب سے جاری فیصلے میں کہا گیا کہ ملزمان کی جانب سے 249-A کے تحت الگ الگ بریت کی درخواستیں دائر کی گئیں، مقدمے میں ملزمان کو سزا نہیں سنائی جاسکتی، اس لیے مقدمے کا مزید ٹرائل چلانا وقت کا ضیاع ہے۔

فیصلے کے مطابق بانی پی ٹی آئی عمران خان، اسدعمر، راجہ خرم شہزاد نواز کی بریت درخواستیں منظور کی جاتی ہیں۔

فیصلے میں کہا گیا کہ علی نواز اعوان ، فیصل جاوید ، عابد حسین اور ظہیرخان کی بریت کی درخواستیں بھی منظورکی جاتی ہیں۔

فیصلے میں مزید کہا گیا کہ ملزمان اسد عمر ، علی نواز اعوان اور فیصل جاوید ضمانت پر ہیں وہ مچلکے واپس لے سکتے ہیں۔

مزید پڑھیں

جوڈیشل کمپلیکس توڑ پھوڑ کیس میں اشتہاری ملزم علی نواز اعوان نے سرنڈر کردیا

دفعہ 144 خلاف ورزی کیس: اسد عمر اور شہزاد وسیم بری

دفعہ 144 کی خلاف ورزی کیس: راجہ خرم شہزاد اور علی نواز اعوان بری

واضح رہے کہ ملزمان کے خلاف 26 مئی 2022 کو احتجاج اور توڑ پھوڑ سے متعلق مقدمہ تھانہ ترنول میں درج کیا گیا تھا۔

pti

asad umar

اسلام آباد

imran khan

Senator Faisal Javed

Asad Umer

district and session court

Asad Omar

Protest and vandalism cases

Comments are closed on this story.

تبصرے

تبولا

Taboola ads will show in this div