Aaj TV News

BR100 4,599 Increased By ▲ 13 (0.29%)
BR30 17,334 Decreased By ▼ -78 (-0.45%)
KSE100 44,888 Decreased By ▼ -36 (-0.08%)
KSE30 17,696 Decreased By ▼ -30 (-0.17%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,381,152 6,357
DEATHS 29,122 17
Sindh 529,218 Cases
Punjab 466,164 Cases
Balochistan 33,975 Cases
Islamabad 120,128 Cases
KP 185,683 Cases

لاہور: پی سی بی کرکٹ کمیٹی نے قومی کرکٹ ٹیم کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کورونا کی وبا اور تجربہ کار کھلاڑیوں کی عدم موجودگی ٹیم کی مجموعی کارکردگی پر اثرانداز ہوئی۔

تفصیلات کے مطابق کرکٹ کمیٹی کے اجلاس میں قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق اور بولنگ کوچ وقار یونس نے خصوصی شرکت کی۔ کرکٹ کمیٹی نے 16 ماہ کی کارکردگی کا جائزہ لیا اور اس پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کوویڈ 19 کی وباء اور تجربہ کار کھلاڑیوں کی عدم موجودگی ٹیم کی مجموعی کارکردگی پر اثر انداز ہوئی۔

کرکٹ کمیٹی نے پی سی بی کو ٹیم منیجمنٹ کو سپورٹ کرنے کی حمایت کردی اور کہا کہ ٹیم منیجمنٹ کو قومی کرکٹ ٹیم سے متعلق اپنی حکمت عملی اور اہداف سے متعلق مکمل وضاحت دینے کی ضرورت ہے۔

سربراہ کرکٹ کمیٹی سلیم یوسف نے کہا کہ کرکٹ کمیٹی جنوبی افریقہ کے خلاف ہوم سیریز کے بعد ایک بار پھر قومی کرکٹ ٹیم کی کارکردگی کا جائزہ لے گی، جنوبی افریقہ کے خلاف ہوم سیریز میں دوسری پوزیشن پر آنے کا کوئی پوائنٹ نہیں رہتا۔

انہوں نے مزید کہا کہ عالمی وباء کے باعث صرف پاکستان کرکٹ ٹیم کو ہی نہیں بلکہ انٹرنیشنل کرکٹ کھیلنے والے دیگر ممالک کی ٹیموں کو بھی مشکلات کا سامنا ہے، کمیٹی کا ماننا ہے کہ ٹیم کے انتخاب اور فائنل الیون کیلئے کھلاڑیوں کے چناؤ میں بہتری ہونی چاہیئے تھی۔ مشکل صورتحال سے نمٹنے کیلئے کھلاڑیوں کی تیاری میں سائنس اور ڈیٹا بیس سے مدد لینے پر زور دیا گیا ہے۔

مصباح الحق اور وقار یونس کی آمد سے قبل چیف سلیکٹر محمد وسیم نے بھی کرکٹ کمیٹی کو اپنی سلیکشن پالیسی سے متعلق بریفنگ دی۔ کرکٹ کمیٹی نے اجلاس میں ڈومیسٹک کرکٹ اور ویمنز کرکٹ کی کارکردگی کا بھی جائزہ لیا۔