Aaj TV News

BR100 4,936 Decreased By ▼ -23 (-0.46%)
BR30 25,403 Decreased By ▼ -331 (-1.28%)
KSE100 45,865 Decreased By ▼ -101 (-0.22%)
KSE30 19,173 Decreased By ▼ -26 (-0.14%)

سینیٹ الیکشن اوپن بیلٹ سے کروانے سے متعلق صدارتی ریفرنس میں چیئرمین سینٹ نے بھی جواب جمع کرا دیا ، جس مین صدارتی ریفرنس کی حمایت کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ سینیٹ الیکشن سے متعلق آئین خاموش ہے،آئین کی تشریح کرنا خالصتا سپریم کورٹ کا کام ہے۔

سپریم کورٹ میں جمع کرائے گئے جواب میں چیرمین سینیٹ نے موقف اپنایا کہ تمام سٹیک ہولڈرز اس بات کو تسلیم کرتے ہیں کہ سینیٹ الیکشن شفاف ہونے چاہیں، اگر کوئی پارٹی پالیسی کے خلاف ووٹ دے تو جرات کا مظاہرہ کرتے ہوئے اقرار کرے اور نتائج کا سامنا کرے۔

جواب میں مزید بتایا گیا ہے کہ 2015 میں بھی سینیٹ الیکشن میں دھاندلی اور ووٹ کی خرید و فروخت پر بحث ہوئی اور بعد ازاں معاملے پر سینیٹ کمیٹی قائم کی گئی، کمیٹی کی سفارشات صدارتی ریفرنس کے ساتھ جمع کروائی جا چکی ہیں۔

چیئرمین سینیٹ کا کہنا ہے کہ سینیٹ کا شفاف الیکشن قومی مفاد میں ہے، شفاف الیکشن کرانا الیکشن کمیشن کی بھی ذمہ داری ہے،جبکہ آئین کی تشریح کرنا خالصتا سپریم کورٹ کا کام ہے۔