Aaj TV News

BR100 4,597 Increased By ▲ 11 (0.24%)
BR30 17,781 Increased By ▲ 212 (1.21%)
KSE100 45,018 Increased By ▲ 192 (0.43%)
KSE30 17,748 Increased By ▲ 82 (0.46%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,367,605 7,586
DEATHS 29,097 20
Sindh 523,774 Cases
Punjab 462,323 Cases
Balochistan 33,910 Cases
Islamabad 117,436 Cases
KP 184,455 Cases

سینیٹ سے کیمرے نکلنے کے بعد ایک اورمعاملہ سامنےآگیا ، سینیٹ سکیورٹی انچارج کی تعیناتی ایک روز پہلے کی گئی نوٹی فیکیشن بھی 11 مارچ کو جاری ہوا۔

سینیٹ ہال میں خفیہ کیمرےلگائے جانے کا معاملہ موضوع بحث بنا ہوا ہے اور یہ بات منظر عام پر آئی ہے کہ سینیٹ سیکیورٹی انچارج کی تعیناتی 11 مارچ کوہوئی۔

سینیٹ سیکیورٹی انچارج وجاہت افضل گزشتہ روزتعینات ہوئے۔ گریڈ18کےوجاہت افضل کی تعیناتی کانوٹیفکیشن11مارچ کوجاری ہوا۔

دوسری جانب اپوزیشن نے سیکرٹری قومی اسمبلی کو خط لکھ دیا ، اپوزیشن نے گزشتہ 24 گھنٹے کی سی سی ٹی وی فوٹیج مانگ لی، خط میں کہا گیا ہے کہ پارلیمنٹ ہاؤس، گیٹس، راہداریوں اور سینیٹ ہال کے اردگرد کے علاقوں کی فوٹیج فراہم کی جائے، انھوں نے سینیٹ کی تحقیقاتی کمیٹی بنانے کا مطالبہ بھی کیا ہے۔

کیمروں کی نشاندہی کے معاملے پر اپوزیشن اراکین نے سیکریٹری قومی اسمبلی اور پریزائیڈنگ افیسر کو الگ الگ خطوط لکھے ہیں ، جس میں پارلیمنٹ ہاوس میں نصب سی سی ٹی وی فوٹیج کو منظر عام پر لانے اور سینیٹ کی تحقیقاتی کمیٹی قائم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

خطوط میں کہا گیا ہے کہ خفیہ کیمرے نصب کر کے آئین کے آرٹیکل 226کی خلاف ورزی کی گئی، غیر قانونی اقدام کے پیچھے چھپے عناصر کو منظر عام پر لایا جائے، بر آمد کیے گئے کیمروں اور دیگر سامان کو تحویل میں لے کر محفوظ بنایا جائے، حکومت اور اپوزیشن کے مساوی نمائندوں پر مشتمل سینیٹ کی تحقیقاتی کمیٹی معاملے کی چھان بین کرے۔