Aaj TV News

BR100 4,381 Decreased By ▼ -20 (-0.46%)
BR30 16,863 Decreased By ▼ -630 (-3.6%)
KSE100 43,233 Decreased By ▼ -1 (-0%)
KSE30 16,718 Increased By ▲ 20 (0.12%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,286,825 372
DEATHS 28,767 6
Sindh 476,674 Cases
Punjab 443,453 Cases
Balochistan 33,506 Cases
Islamabad 107,887 Cases
KP 180,316 Cases

نوبل انعام یافتہ ملالہ یوسفزئی چاہتی ہیں کہ لڑکیاں صرف کرکٹ بیٹ اور گیند اٹھانے کے بارے میں سوچے نہیں بلکہ اسے آزمائیں بھی۔

خواتین کو بااختیار بنانے اور تعلیم کے لئے سرگرم عمل ہونے کے لئے مشہور ملالہ یوسفزئی نے نوجوان خواتین پر زور دیا کہ وہ خود پر اعتماد کریں۔

طالبان کے جان لیوا حملے میں موت کو شکست دینے والی سوات کی 24 سالہ ملالہ نے اسکائی اسپورٹس کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں کہا کہ خواتین کو ان کی صنف کی بنیاد پر کبھی بھی کھیل سے مایوس نہیں ہونا چاہئے۔

ملالہ نے کہا، 'آج بھی جب ہم اس اسٹیڈیم میں خواتین کرکٹرز کو کھیلتے ہوئے دیکھتے ہیں، تو وہ وہاں موجود تمام لڑکیوں کیلئے یہ پیغام ہوتا ہے کہ وہ کھیلوں میں حصہ لے سکتی ہیں، وہ کھلاڑی بن سکتی ہیں، وہ جس کھیل کو چاہیں کھیل سکتی ہیں۔'

انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے پاس پہلے ہی متعدد رول ماڈل خواتین موجود ہیں جو تاریخ کو بدل رہی ہیں، اور کھیل اس سے مستثنیٰ نہیں ہے۔

ملالہ نے اس امید کا اظہار کیا کہ ہم خواتین کو خواب دیکھنے سے نہ روکیں۔ انہوں نے لڑکیوں کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے کہا کہ وہ اسے ضرور آزمائیں اور اگر اس سے لطف اندوز ہوتی ہیں تو ضرور کریں۔

گزشتہ ہفتے ملالہ نے اپنے انسٹاگرام پر کرکٹ سے محبت کا اظہار بھی کیا تھا۔