Aaj News

پیر, جولائ 15, 2024  
08 Muharram 1446  

ممنوعہ فنڈنگ کیس: عمران خان نے بینکنگ کورٹ کا حکم نامہ چیلنج کردیا

بنکنگ کورٹ کا عبوری حکم نامہ کالعدم قرار دیا جائے، عمران خان
اپ ڈیٹ 08 فروری 2023 02:15pm
فوٹو۔۔۔۔۔۔ فائل
فوٹو۔۔۔۔۔۔ فائل

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے ممنوعہ فندنگ کیس میں بینکنگ کورٹ کا 31 جنوری کا حکم نامہ چیلنج اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کردیا۔

بینکنگ کورٹ نے عمران خان کی جانب سے ویڈیو لنک پر پیشی کی درخواست مسترد کی تھی۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے اپنی درخواست میں عدالت سے استدعا کی ہے کہ بینکنگ کورٹ کا 31 جنوری کا عبوری حکم نامہ کالعدم قرار دیتے ہوئے صحت یاب ہونے تک ویڈیو لنک پرعدالت حاضری کی اجازت دی جائے۔

ممنوعہ فنڈنگ کیس کا پس منظر

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ کیس میں عمران خان کے بیان حلفی کو غلط قراردیتے ہوئے شوکاز نوٹس جاری کرکیا تھا۔

چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی سربراہی میں پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے 3 رکنی بینچ نے ’متفقہ‘ فیصلے میں کہا کہ پاکستان تحریک انصاف پرممنوعہ فنڈز لینا ثابت ہوگیا ہے۔

الیکشن کمیشن نے68 صفحات پر مبنی فیصلے میں قراردیا کہ پی ٹی آئی نے امریکا سے ایل ایل سی فنڈنگ حاصل کی تھی، جبکہ عمران خان نےالیکشن کمیشن میں غلط بیان حلفی جمع کرایا، چیئرمین پی ٹی آئی نے 2008 سے 2013 تک غلط ڈیکلیریشن دیے۔ پارٹی نے 34 غیرملکیوں اور عارف نقوی سے فنڈزلیے ہیں۔

pti

اسلام آباد

imran khan

Banking Court

Prohibited Funding Case