Aaj TV News

BR100 5,282 Increased By ▲ 24 (0.46%)
BR30 27,601 Increased By ▲ 46 (0.17%)
KSE100 48,305 Increased By ▲ 53 (0.11%)
KSE30 19,479 Decreased By ▼ -59 (-0.3%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 939,931 1,194
DEATHS 21,633 57
Sindh 327,021 Cases
Punjab 343,703 Cases
Balochistan 26,152 Cases
Islamabad 82,065 Cases
KP 135,569 Cases

کیا پاکستان میں کورونا وائرس کی انتہا آ چکی ہے یا یہ اپنے اختتام کی جانب گامزن ہے۔

کورونا وائرس کے حوالے سے اعداد وشمار کو دیکھا جائے تو جون کے آغاز سے وسط جون تک ملک میں یومیہ متاثرین کی تعداد تیزی سے بڑھ رہی تھی۔

سرکاری اعداد و شمار پر نظر ڈالیں تو بظاہر گذشتہ دو ہفتوں میں یومیہ متاثرین کی تعداد بلند ترین سطح سے کہیں کم ہے۔

خصوصی طور پر پاکستان کے صوبہ پنجاب میں اس وقت پہلے کی نسبت بہت کم مریض سامنے آرہے ہیں۔

کچھ ماہرین کا یہ کہنا ہے کہ نئے متاثرین میں کمی کی بنیادی وجہ ملک بھر میں کورونا ٹیسٹنگ میں کمی ہے۔ ظاہر ہے کہ اگر آپ ٹیسٹ ہی کم کریں گے تو یومیہ متاثرین کی تعداد کم ہی سامنے آئے گی۔

ٹیسٹنگ کے حوالے سے تعداد کا جائزہ لیا جائے تو یہ بات تو درست ہے کہ ملک میں یومیہ ٹیسٹنگ کی تعداد میں گذشتہ ایک ماہ میں کمی آئی ہے۔اگر صورتحال کا جائزہ لیں تو پاکستان میں روزانہ کی بنیاد پر ساٹھ سے ستر افراد اپنی جان سے ہاتھ دھورہے ہیں۔

عوام کی بے احتیاطی کے باعث کورونا کے وار جاری ہیں، آج بھی کورونا سے مزید سڑسٹھ افراد جان کی بازی ہار گئے اور دوہزار ایک سو پینسٹھ نئے کیسزرپورٹ ہوئے، ماہرین کے مطابق اس وائرس کا پھیلاؤ صرف احتیاط سے ہی روکا جا سکتا ہے۔