Aaj TV News

BR100 4,112 Decreased By ▼ -52 (-1.26%)
BR30 20,622 Decreased By ▼ -321 (-1.53%)
KSE100 39,633 Decreased By ▼ -555 (-1.38%)
KSE30 16,693 Decreased By ▼ -210 (-1.24%)

کراچی کے علاقے نارتھ ناظم آباد میں سماجی رہنما فیروز بنگالی کی بیٹی کے قتل کا معمہ حل ہوگیا، کراچی میٹروپولیٹن کارپوریشن کی سرکاری جیکٹ نے قاتلوں کو پکڑوا دیا، گرفتار ہونے والے دونوں ملزمان ادارے کے ملازمین کے بیٹے ہیں، پولیس نے قتل میں ملوث دونوں ملزمان کو گرفتار کرلیا ہے۔

خاتون کے قتل کا واقعہ انیس اکتوبر کو پیش آیا تھا، واقعے کا مقدمہ فیروزبنگالی کی مدعیت میں نارتھ ناظم آباد تھانے میں درج کر لیا گیا ہے جس میں مدعی نے بتایا کہ اس کی بیٹی فاطمہ اپنی بہن فضا کے ہمراہ انٹر میڈیٹ بورڈ فارم جمع کرانے آئی تھی اور فیس جمع کرانے کے لیے بینک ڈھونڈ رہی تھی کہ اسے فائرنگ کر کے قتل کر دیا گیا۔

پولیس نے واقعے کی مختلف پہلو سے تفتیش کرکے ملزمان کی گرفتاری کیلئے کارروائی شروع کی، کے ایم سی کی سرکاری جیکٹ نے قاتلوں کو پکڑوا دیا۔ گرفتاردونوں ملزمان کے ایم سی ملازمین کے بیٹے ہیں۔

پولیس کے مطابق واقعہ دشمنی نہیں اسٹریٹ کرائم کا شاخسانہ ہے، ملزمان نے بورڈ آفس کے قریب چار لڑکیوں کو گاڑی میں جاتے دیکھا اور ان کا پیچھا کرتے ہوئے بلاک اے نارتھ ناظم آباد تک آئے۔ ملزم شکیل موٹرسائیکل چلا رہا تھا بلال عرف بلی پیچھے بیٹھا تھا۔ ملزم بلال نے اپنے والد کی کے ایم سی کی جیکٹ پہن رکھی تھی، بلال جیسے ہی واردات کیلئے موٹر سائیکل سے اترا لڑکی نے گاڑی چلا دی۔

غصے میں آکر ملزم بلال نےفائر کھول دیا جو لڑکی فاطمہ کو لگا۔ فاطمہ کو شدید زخمی حالت میں اسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ زخمیوں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئی۔