Aaj TV News

BR100 4,231 Decreased By ▼ -22 (-0.51%)
BR30 21,389 Decreased By ▼ -14 (-0.07%)
KSE100 40,807 Decreased By ▼ -224 (-0.55%)
KSE30 17,160 Decreased By ▼ -135 (-0.78%)

شیو سینا کی جانب سے ممبئی میں موجود 'کراچی' بیکری کا نام تبدیل کرنے کے مطالبے پر خود بھارتیوں نے شیو سینا اور بی جے پی حکومت کی کلاس لے لی۔

بھارتی انتہا پسند پاکستان سے نفرت میں اندھے ہوگئے، ممبئی میں موجود 'کراچی بیکری' شیوسینا کو کھٹکنے لگی۔ بیکری کے مالک کو نام بدلنے کیلئے دھمکیاں دینے لگے۔

شیو سینا کا رہنما نتن نند گاؤنکرکہتا ہے کہ اسے کراچی نام سے نفرت ہے۔ اُس نے 'کراچی' کو مراٹھی میں کسی نام سے تبدیل کرنے کا الٹی میٹم دے دیا۔

enter image description here

شیو شینا رہنما کی دھمکی کے بعد دکاندار نے بیکری کے نام کو اخبار کے ساتھ تو ڈھانپ دیا لیکن اس اقدام سے کئی بھارتی شہری برہم ہوگئے۔

ٹوئیٹر پر انڈین صارفین پھٹ پڑے، ایک صارف نے لکھا کہ اگرپاکستان کے شہر حیدرآباد میں بمبئی بیکری ہوسکتی ہے تو بھارت کے شہر ممبئی میں کراچی نام کی بیکری کیوں نہیں چل سکتی؟ یہ کیسا انصاف ہے۔

ایک اور صارف نے لکھا کہ بی جے پی بھارت کو پتھروں کے دور میں دھکیل رہی ہے۔