Aaj TV News

BR100 4,979 Decreased By ▼ -47 (-0.94%)
BR30 24,460 Decreased By ▼ -313 (-1.26%)
KSE100 46,636 Decreased By ▼ -284 (-0.61%)
KSE30 18,480 Decreased By ▼ -178 (-0.95%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,218,749 2,928
DEATHS 27,072 68
Sindh 448,658 Cases
Punjab 419,423 Cases
Balochistan 32,707 Cases
Islamabad 103,720 Cases
KP 170,391 Cases

ورلڈ گولڈ کونسل کی رپورٹ کے مطابق پاکستان میں سونے کے ذخائر 2020 کی چوتھی سہ ماہی میں 64.64 ٹن تھے، جو اب 2021 کی پہلی سہ ماہی میں بڑھ کر 64.65 ٹن ہوگئے۔

اسٹیٹ بینک کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کے پاس تقریباً 3.8 ارب ڈالر مالیت کے برابر سونا ذخائر میں موجود ہے اور یہ تقریباً ملک کے ریزروز یعنی مجموعی ذخائر کا 16.6 فیصد بنتا ہے۔

لیکن دنیا میں کئی ممالک ایسے بھی ہیں جو پاکستان سے کئی گنا زیادہ سونے کے ذخائر کے مالک ہیں۔

دنیا میں سب سے زیادہ سونے کے ذخائر رکھنے والے ممالک میں امریکہ سرفہرست ہے جس کے پاس 8 ہزار ٹن سے زائد سونا موجود ہے۔

امریکہ کے پاس یورپ کے تین بڑے ممالک کے ذخائر کو ملا کر بھی سب سے زیادہ ذخائر موجود ہیں۔

سونے کے سب سے زخائر رکھنے والے ممالک کی فہرست میں دوسرا نمبر جرمنی کا آتا ہے۔ جرمنی کے پاس سونے کے ذخائر کی تعداد 3 ہزار 361 ہے۔

دنیا کے مختلف ملکوں کے سینٹرل بینک کے ریزروز کئی اقسام کے ہوتے ہیں جن میں سونے کے علاوہ دیگر غیر ملکی کرنسیاں وغیرہ بھی شامل ہوتی ہیں۔

ایشیا میں سب سے زیادہ سونے کے ذخائر رکھنے والا ملک چین ہے، جس کے پاس ذخائر کی تعداد 1948 ٹن ہے۔

دوسری جانب بھارت کے پاس پاکستان سے کئی گنا زیادہ سونا موجود ہے۔ بھارت کے پاس سونے کے ذخائر کی تعداد 695 ٹن ہے۔