Aaj TV News

BR100 4,381 Decreased By ▼ -20 (-0.46%)
BR30 16,863 Decreased By ▼ -630 (-3.6%)
KSE100 43,233 Decreased By ▼ -1 (-0%)
KSE30 16,718 Increased By ▲ 20 (0.12%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,286,453 431
DEATHS 28,761 8
Sindh 476,494 Cases
Punjab 443,379 Cases
Balochistan 33,491 Cases
Islamabad 107,848 Cases
KP 180,254 Cases

پنجاب میں ڈینگی کیسزمیں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے۔ چوبیس گھنٹےکے دوران چار سو دو نئے مریض رپورٹ ہوئے۔

لاہورمیں تین سوانیس افراد مرض کا نشانہ بنے۔ رواں سال ڈینگی اٹھارہ افراد کی جانیں بھی لے گیا۔

پنجاب میں ڈینگی کےکیسزتیزی سے بڑھنے لگے۔ چوبیس گھنٹوں کے دوران مزید چارسو دو افراد مرض کا شکار ہوگئےہیں۔

لاہورمیں سب سے زیادہ تین سو انیس مریض رپورٹ ہوئے۔

صوبے کے مختلف ہسپتالوں میں پندرہ سو چھ مریضوں کو طبی امداد بھی دی جارہی ہے۔شہری کہتے ہیں حکومت ڈینگی کوقابو کرنے میں ناکام ہوگئی ہے۔

پنجاب میں مجموعی طورپرچھ ہزارایک سونواسی افراد ڈینگی کا نشانہ بن چکے ہیں جبکہ ڈینگی وائرس سے اٹھارہ افرادجان کی بازی ہار چکے ہیں۔

دوسری جانب مسلم لیگ نون نے ڈینگی سے بڑھتی اموات کی ذمہ داری حکومت پر عائد کردی۔

لیگی رہنما کہتے ہیں بروقت ہنگامی اقدامات نہ کرنے کی قیمت عوام اپنی جانوں سے ادا کر رہے ہیں۔ مسلم لیگ نون نے ڈینگی وباء، مہنگائی اور امن و امان پر پنجاب اسمبلی کا اجلاس بلانے کا اعلان کردیا۔

مسلم لیگ نون مرکزی سیکرٹریٹ میں لیگی رہنما عظمیٰ بخاری، خواجہ سلمان رفیق اور عمران نذیر نے مشترکہ پریس کانفرنس کی۔

عظمیٰ بخاری کا کہنا تھا کہ صوبے میں بروقت ڈینگی کا تدارک نہ ہونے کے باعث اموات بڑھ رہی ہیں، شہباز شریف بننے والے وزیر اعلی نے ادویات کی قیمتیں چھ سو فیصد بڑھائیں۔

خواجہ سلمان رفیق اور عمران نذیر کا کہنا تھا کہ ڈینگی کے تدارک کیلئے ماضی میں ایس او پیز بنائے گئے لیکن حکومت کی غیر سنجیدگی کے باعث ان پر عمل نہیں ہورہا۔