Aaj TV News

BR100 4,519 Increased By ▲ 22 (0.49%)
BR30 18,277 Decreased By ▼ -62 (-0.34%)
KSE100 44,114 Increased By ▲ 178 (0.41%)
KSE30 17,034 Increased By ▲ 95 (0.56%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,283,886 411
DEATHS 28,704 7
Sindh 475,097 Cases
Punjab 442,876 Cases
Balochistan 33,471 Cases
Islamabad 107,601 Cases
KP 179,888 Cases

روس کے عسکری ذرائع کے مطابق روسی فضائیہ نے اپنے "مگ 31" لڑاکا طیارے کے ذریعے جاپان کے سمندر کے اوپر پرواز کرنے والے امریکی B1B بمبار فوجی طیارے کو پیچھنے ہٹنے پر مجبور کیا ہے۔

اتوار کے روز سامنے آنے والی اطلاعات کے مطابق یہ واقعہ اسی علاقے میں امریکی جنگی بحری جہاز کے ساتھ پیش آنے والے واقعے کے چند روز بعد سامنے آیا ہے۔

روسی خبر رساں ایجنسی TASS کے مطابق امریکی بمبار طیارے نے علاقے میں روسی سرحد کی خلاف ورزی نہیں کی۔

اس سے قبل روس نے جمعے کے روز بتایا تھا کہ اس کے ایک جنگی بحری جہاز نے ایک امریکی حربی جہاز (Destroyer) کو پیچھے ہٹنے پر مجبور کیا۔ امریکی بحری جہاز نے روس کے علاقائی پانی کی خلاف ورزی کی کوشش کی جب کہ جاپان کے سمندر میں روس اور چین کے درمیان بحری مشقیں ہو رہی تھیں۔ تاہم واشنگٹن نے اس بات کی تردید کر دی۔

روسی مؤقف کا جواب دیتے ہوئے امریکی بحریہ نے باور کرایا کہ جو کچھ بتایا جا رہا ہے وہ غلط ہے۔ امریکی بحریہ کے بیان میں کہا گیا کہ امریکی بحری جنگی جہاز USS Chafee جاپان کے سمندر کے بین الاقوامی پانی میں معمول کا گشت کر رہا تھا۔ مزید یہ کہ روسی اور امریکی جہازوں کے بیچ معاملہ محفوظ اور پیشہ ورانہ نوعیت کا رہا۔

واشنگٹن نے اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ روس نے امریکا کو علاقے میں مشقوں سے آگاہ کر دیا تھا۔

امریکی بحریہ کے مطابق اس کے جنگی جہاز نے بین الاقوامی قانون کے احترام کی پاسداری کی۔