Aaj News

سندھ حکومت بااختیار بلدیاتی ادارے قائم کرنے کی پابند ہے، سپریم کورٹ

اسلام آباد:سپریم کورٹ نے ایم کیو ایم پاکستان کی سندھ میں...
اپ ڈیٹ 01 فروری 2022 12:45pm

احمد عدیل سرفراز

اسلام آباد:سپریم کورٹ نے ایم کیو ایم پاکستان کی سندھ میں بلدیاتی اختیارات کی منتقلی کی درخواست نمٹا دی،عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ سندھ حکومت بااختیار بلدیاتی ادارے قائم کرنے کی پابند ہے۔

چیف جسٹس پاکستان جسٹس گلزار احمد نے محفوظ کیا گیا فیصلہ پڑھ کر سنایاجس میں کہا گیا ہےکہ ماسٹر پلان بنانا اور اس پر عملدرآمد بلدیاتی حکومتوں کے اختیارات ہیں، بلدیاتی حکومت کے تحت کوئی نیا منصوبہ صوبائی حکومت شروع نہیں کرسکتی۔

عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا کہ سندھ حکومت بااختیار بلدیاتی ادارے قائم کرنے کی پابند ہے، آئین کے تحت بلدیاتی حکومت کو مالی، انتظامی اور سیاسی اختیارات یقینی بنائے جائیں، سندھ حکومت مقامی حکومتوں کے ساتھ ہم آہنگی اور اچھا ورکنگ ریلیشن رکھنےکی پابندہے۔

عدالتی فیصلے میں کہا گیا ہےکہ سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2013 کی شق 74 اور 75 کالعدم قرار دی جاتی ہیں، سندھ حکومت تمام قوانین کی آرٹیکل 140 اے سے ہم آہنگی یقینی بنائے۔

عدالت نے اپنے فیصلے میں سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی ایکٹ اور کے ڈی اے قوانین، ملیرڈیولپمنٹ اتھارٹی اور حیدرآبادڈیولپمنٹ اتھارٹی کے قوانین بھی آئین کے مطابق تبدیل کرنے کا حکم دیا ہے ۔

سپریم کورٹ نے لیاری ڈیولپمنٹ اتھارٹی اورواٹر بورڈ قانون میں بھی ضروری تبدیلیوں کی ہدایت کی ہے۔

اس کے علاوہ عدالت نے سیہون ڈیولپمنٹ اتھارٹی اور لاڑکانہ ڈیولپمنٹ اتھارٹی قوانین میں بھی ضروری ترامیم کی ہدایت کی ہے۔

عدالت نےکہا ہےکہ جہاں صوبائی ،مقامی حکومتوں کےاختیارات میں تضاد ہے ان شقوں میں تبدیلی کی جائے۔

Chief Justice

Supreme Court

اسلام آباد

MQM

gulzar ahmad

Comments are closed on this story.

مقبول ترین