Aaj News

علیم خان کا عدم اعتماد پر نیوٹرل رہنے کا فیصلہ

علیم گروپ کاتحریک عدم اعتماد اور وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی تبدیلی پر "نیوٹرل" رہنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ ان کی حکومت سے ناراضگی اور تحفظات برقرار ہیں تاہم انہیں گورنر سندھ، گورنر خیبر پختونخوا، وفاقی وزرا نے سیاسی سیز فائر پر رضامند کرلیا ہے۔
شائع 24 مارچ 2022 05:26pm
فوٹو — فائل
فوٹو — فائل

لاہور: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما علیم خان نے تحریک عدم اعتماد اور پنجاب میں مائنس ون معاملے پر نیوٹرل رہنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

ذرائع کے مطابق علیم گروپ کاتحریک عدم اعتماد اور وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی تبدیلی پر "نیوٹرل" رہنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ ان کی حکومت سے ناراضگی اور تحفظات برقرار ہیں تاہم انہیں گورنر سندھ، گورنر خیبر پختونخوا، وفاقی وزرا نے سیاسی سیز فائر پر رضامند کرلیا ہے۔

ذرائع کا بتانا ہے کہ اپوزیشن جماعتوں نے بھی علیم گروپ کی خاموشی دیکھتے ہوئے حمایت حاصل کرنے کیلئے مزید رابطے نہیں کیے، ن لیگ کے قائد نواز شریف سے لندن میں ملاقات کے بعد پی ٹی آئی کے ناراض رہنما اپوزیشن کے قریب آچکے ہیں لیکن فی الوقت پارٹی چھوڑنے کو تیار نہیں ہیں۔

اس کے علاوہ علیم خان نے 40 ایم پی ایز سے ملاقاتوں کا دعویٰ کیا تھا جن کے نام ظاہر نہیں کیے گئے تاہم ان تمام ایم پی ایز نے علیؐ گورپ میں شمولیت اختیار نہیں کی ہے اور کہا جا رہا ہے کہ علیم خان تحریک عدم اعتماد کا حتمی نتیجہ آنے کے بعد سیاسی مستقبل کے بارے حتمی فیصلہ کریں گے۔

Aleem Khan

Vote of Confidence

Comments are closed on this story.