Aaj.tv Logo

اسلام آباد: اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے سود کیخلاف وفاقی شرعی عدالت کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کردیا۔

اسٹیٹ بینک نے اپیل میں موقف اپنایا ہے کہ وفاقی شرعی عدالت کی جانب سے سپریم کورٹ ریمانڈ آرڈر کے احکامات کو مدنظر نہیں رکھا گیا، شرعی عدالت کے فیصلے میں اٹھائے گئے نکات کی حد تک ترمیم کی جائے۔

اسٹیٹ بینک کی طرف سے سلمان اکرم راجہ نے اپیل دائرکی، اپیل منظور کرنے کی استدعا کرتے ہوئے موقف اپنایا گیا کہ شرعی عدالت کے فیصلے میں اٹھائے گئے نکات کی حد تک ترمیم کی جائے۔

اپیل میں کہا گیا ہے کہ شرعی عدالت نے رولز میں ترمیم کا حکم دیا ہے، شرعی عدالت نے سیونگ سرٹیفکیٹس سے متعلق رولز کو خلاف اسلام قرار دیا۔

اسٹیٹ بینک نے اپیل میں وزارت خزانہ، قانون، چئیرمین بنکنگ کونسل اور دیگر کو فریق بنایا ہے۔

دوسری جانب چار نجی بنکوں نے بھی شرعی عدالت کے فیصلے کیخلاف اپیل دائرکردی ہے۔