Aaj TV News

BR100 4,597 Increased By ▲ 11 (0.24%)
BR30 17,781 Increased By ▲ 212 (1.21%)
KSE100 45,018 Increased By ▲ 192 (0.43%)
KSE30 17,748 Increased By ▲ 82 (0.46%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,360,019 6,540
DEATHS 29,077 12
Sindh 520,415 Cases
Punjab 460,335 Cases
Balochistan 33,855 Cases
Islamabad 115,939 Cases
KP 183,865 Cases

ڈائریکٹر جنرل رینجرز سندھ میجر جنرل افتخار حسن چوہدری نے کہا ہے کہ معاشرے سے منشیات کا خاتمہ صرف ہمارے اقدامات سے نہیں بلکہ سب کو متحد کوکر کرنا ہوگا۔

نجی انسٹیٹیوٹ میں تعلیمی اداروں میں منشیات کے استعمال کے موضوع لر منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے ڈی جی رینجرز سندھ کا کہنا تھا کہ تجربات سب نے کیے ہوتے ہیں لیکن اپنے لیے بہتر سوچیں، زندگی کا سکون اللہ کے ذکر میں ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ منشیات کے عادی افراد مجرم اصل مجرم ان منشیات فروش ہیں ، جو اسے سپلائی کر رہے ہیں،منشیات کے عادی افراد کو حقارت سے نہیں دیکھنا چاہیے، منشیات کے عادی افراد کو اس سے نکلنے کے لیے مدد کی ضرورت ہے ، اور عوام منشیات سپلائی کرنے والوں کی نشاندہی کریں۔

ان کا کہنا تھا کہ ڈرگ ریہیبلیشن سینٹر کو بہتر بنانے اور اسکی تعداد بڑھانے کے لکے بھی کوشاں ہیں، ہمارے پاس اتنی بڑی آبادی کے لیے ایک ریہیبلیٹیشن سینٹر ہے جو ناکافی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جامعات میں سیمینار کا مقصد منشیات کے عادی افراد کو ان سے نکالنا ہے۔

سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے فورس کمانڈر اے این ایف سندھ بریگیڈئر وقار حیدر رضوی کا کہنا تھا کہ تعلیمی اداروں میں منشیات کا استعمال بڑھتا جارہا ہے ڈرگز کے استعمال سے بچوں کی صحت پر بھی مضر اثرات رونما ہوتے ہیں، موجودہ دور میں کالج، اسکول اور جامعات میں طالبعلموں کا رجحان منشیات کی جانب بہت تیزی سے بڑھ رہا ہے۔