Aaj TV News

BR100 4,597 Increased By ▲ 11 (0.24%)
BR30 17,781 Increased By ▲ 212 (1.21%)
KSE100 45,018 Increased By ▲ 192 (0.43%)
KSE30 17,748 Increased By ▲ 82 (0.46%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,360,019 6,540
DEATHS 29,077 12
Sindh 520,415 Cases
Punjab 460,335 Cases
Balochistan 33,855 Cases
Islamabad 115,939 Cases
KP 183,865 Cases

لاہور:پاکستان تحریک انصاف کے رہنما ءجہانگیر ترین اور ان کے بیٹے علی ترین کیخلاف فراڈ اور منی لانڈرنگ کے مقدمات درج کرلئے گئے،جہانگیر ترین کیخلاف مجموعی طور پر 5ارب 34کروڑ روپے کے مقدمات درج کئے گئے ہیں۔

وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے )نے منی لانڈرنگ کیس میں تحریک انصاف کے رہنما ءجہانگیر ترین اور ان کی فیملی کیخلاف مزید 2مقدمات درج کرلئے۔

ایف آئی اے کے مطابق مقدمے میں 3 ارب روپے کا الزام ثابت ہوا ہے، مقدمے میں سابق سیکرٹری ایگریکلچر رانا نسیم بھی شامل ہیں جو شوگر مل مافیا کی سرپرستی کرتے رہے۔

ایف آئی اے کے مطابق دوسرے مقدمے میں جہانگیر ترین، ان کے بیٹے علی ترین اور 2بیٹیوں کے نام بھی شامل ہیں۔

ایف آئی اے کی جانب سے درج کی گئی ایف آئی آر میں کہا گیا کہ جے ڈی ڈبلیو سے پلپ کمپنی میں شیئرز فراڈ کے ذریعے منتقل کے گئے جبکہ کمپنی کے باقی عہدیداروں کے خلاف بھی کارروائی کی جارہی ہے۔

ایف آئی اے کے مطابق جہانگیر ترین کے قابل اعتماد ساتھی عامر وارث نے کمپنی اکاؤنٹ سے غیر قانونی ٹرانزیکشنز کی ہیں،عامر وارث نے غیر قانونی طریقے سے کمپنی اکاؤنٹ سے 2ارب روپے سے زائد رقم نکلوائی، یہ رقم بعد میں جہانگیر ترین کی فیملی کے اکاؤنٹ میں غیر قانونی طریقے سے جمع کرائی گئی۔

ایف آئی اے نے جہانگیر ترین اور علی ترین کیخلاف 3ارب 14کروڑ کے مبینہ فراڈ اور 2 ارب 20 کروڑ روپے کی منی لانڈرنگ کا مقدمہ درج کیا ہے۔