Aaj TV News

BR100 4,437 Decreased By ▼ -50 (-1.12%)
BR30 17,366 Decreased By ▼ -414 (-2.33%)
KSE100 43,549 Decreased By ▼ -298 (-0.68%)
KSE30 16,923 Decreased By ▼ -127 (-0.74%)
COVID-19 TOTAL DAILY
CASES 1,287,703 310
DEATHS 28,793 9
Sindh 477,119 Cases
Punjab 443,610 Cases
Balochistan 33,514 Cases
Islamabad 107,989 Cases
KP 180,471 Cases

وفاقی بجٹ میں مزدور کی کم سے کم اجرت بیس ہزار روپے ماہانہ کردی گئی ہے۔ لیکن کرائے کا مکان، بجلی اور گیس کا بل نکال کر صرف اور صرف خسارہ بچتا ہے۔

مزدور کی کم سے کم اجرت 20 ہزار کرنے پر محنت کی چکی میں پسنے والوں کا شکوہ کرتے ہوئے کہنا ہے کہ مہنگائی، بل اور کرایہ پورا کریں یا گھر کا چولہا جلائیں؟

اسلام آباد سڑک کنارے اپنے اوزاروں کے ہمراہ مزدوری کی تلاش میں بیٹھے صاحب کا کہنا ہے کہ گزشتہ ڈیڑھ سال سے کورونا وباء کا شکار رہے۔ بجٹ میں بہت توقعات تھیں، 20 ہزار میں کرایہ، بلز اور اہلخانہ کے لیے دال روٹی کیسے ممکن ہے۔

مزدوروں نےکم سے کم اجرت 30 سے 40 ہزار روپے ماہانہ رکھنے کا مطالبہ کیا ہے۔

محنت کش کہتے ہیں حکومت ہی نہیں بلکہ مزدوروں کے فلاح کے تنظیموں بھی اپنا کردار ادا کریں۔

دوسری جانب وفاقی حکومت کی جانب سے تنخواہوں میں دس فیصد اضافے کے فیصلے کو محنت کشوں نے مسترد کرتے ہوئے مہنگائی کے تناسب سے اجرت مقرر کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔